وزیرزراعت کی زرعی ادویات کے استعمال کی روک تھام کیلئے سخت قوانین تیار کرنیکی ہدایت 

وزیرزراعت کی زرعی ادویات کے استعمال کی روک تھام کیلئے سخت قوانین تیار ...

پشاور(سٹاف رپورٹر)خےبر پختونخوا کے وزےر زراعت و لائےو سٹاک محب اللہ خان نے متعلقہ افسران کو صوبے مےں جعلی کھاد اور زہرےلی زرعی ادوےات کے استعمال کی روک تھام کےلئے سخت قوانےن تےار کرنے ار موثر اقدامات اٹھانے کی ہداےت کی ہے وہ بدھ کے روز پشاور مےں محکمہ زراعت کے شعبہ توسےع کی سالانہ سرگرمےوں کے جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے صوبائی وزےر نے تاکےد کی کہ زہرےلی زرعی ادوےات کی در آمد اور فروخت کے حوالے سے قوانےن مےں ترامےم کے ذرےعے مزےدسختی پےدا کی جائے تا کہ ان سے پھےلنے والی بےمارےوں کا تدارک ہو ۔ اجلاس مےں دوسروں کے علاوہ سےکرٹری زراعت و لائےو سٹاک محمد اسرار خان ڈائرےکٹر جنرل زراعت توسےع محمد نسےم، پرنسپل اے ٹی آئی فضل محمود، ڈائرےکٹر ضم شدہ اضلاع رحمت الدےن اور ضلعی زرعی افسران بھی موجود تھے۔اجلاس مےں صوبائی وزےر کو برےفنگ مےں بتاےا گےا کہ سال رواں کے دوران 3 لاکھ 50 ہزار زمےنداروں نے محکمہ زراعت سے مشاورت کے لئے رابطہ کےا اور انہےں جدےدسائنسی طرےقوں اور مشاورت سے روشناس کراےا گےا ۔ ان کے لئے 1401 تربےتی مراکز قائم کئے جبکہ 58 ہزار سے زائد زمےنداروں کی تربےت کی گئی، 82 فےلڈ ڈے کا انعقاد ہوا 6 ہزار 507 زمےنداروں نے اس مےں حصہ لےا 72 ورکشاپس منعقد کی گئےں۔ صوبائی وزےر نے اجلاس کے دوران صوبے مےں جاری ٹےلی فارمنگ منصوبوں کے حوالے سے اپنے اطمےنان کا اظہار کرتے ہوئے اس کے دوسرے فےز کا پی سی ون جلد بنانے کی ہداےت کی ۔ انہوں نے ہداےت کی کہ بےورو آف اےگرےکلچر انفارمےشن کی جانب سے بنائی گئی ڈاکومنٹری کو بھی زمےنداروں تک پہنچائےں ۔ انہوں نے افسران سے کہا کہ وہ اےسی منصوبہ بندی اپنائےں جسکی بدولت زمنےدار کم اراضی اور کم محنت سے زےادہ فوائد حاصل کر سکےں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...