محکمہ صحت، تعلیم سمیت دوسرے محکموں میں چیک اینڈ بیلنس سے بہتری آئی ہے، عاصم خان

محکمہ صحت، تعلیم سمیت دوسرے محکموں میں چیک اینڈ بیلنس سے بہتری آئی ہے، عاصم ...

پشاور (سٹی رپورٹر)ضلع ناظم پشاورمحمدعاصم خان نے سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ پشاور کی چارسالہ کا رکردگی رپورٹ ہمارا پشاور پیش کرتے ہوئے کہاہے کہ محکمہ صحت،تعلیم سمیت دیگرماتحت محکموں میں چیک اینڈ بیلنس ہونے کی وجہ سے بہتری آئی ہے اور پی ٹی سی فنڈز کی وجہ سے سکولوں میں سی اینڈ ڈبلیو کے تخمینہ کے مطابق ایک کلاس روم اور برآمدہ پر 17 لاکھ روپے لاگت آتی ہے جو ڈسٹرکٹ ممبران نے پی ٹی سی فنڈز سے 8 لاکھ روپے میں بنا یاہے اور اسی وجہ سے سرکاری سکولوں میں تین گنا زیادہ کام ہوا ہے، جنرل بس اسٹینڈ، کوہاٹ، چارسدہ اور کارخانوں بس سٹینڈ سے پہلے پیسے نکال کر اس پر خر چ نہیں کیاجاتاتھا لیکن ہم نے روش بد ل کر اس میں لوکل فنڈزسے انتظارہ گاہیں،گرین بیلٹ، باؤنڈری وال جبکہ یو ایسڈ کے تعاون سے پبلک لیٹرین بنائے ہیں ان خیالات کا اظہارضلع ناظم پشاورمحمدعاصم خان نے ڈسٹرکٹ ممبران شمس الباری، وسیم اکرم، لیاقت خان، تقدیر علی، کلثوم، گل نسرین، ہدایت اللہ،گلزادہ،،اظہر خان،اخترعلی،خالد وقاض اور ڈائریکٹر جنرل سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ میاں شفیق الرحمان، کے ہمراہ سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ کی چارسالہ کارکردگی رپورٹ ہمارا پشاور کے حوالے سے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہیں ضلع ناظم محمدعاصم خان نے کہاکہ پشاور کے مضافاتی علاقوں میں بجلی لوڈ شیڈنگ کو مد نظر رکھتے ہوئے 97 میں سے 35 بنیادی مراکز صحت، کیٹیگری ڈی ہسپتال اور رولر ہیلتھ سنٹر ز کی سولرائزیشن کرائی ہے جس سے ایکسرے،لیبارٹری ٹیسٹ اور او پی ڈی میں مریضوں کو سہولیات میسر ہوگئی ہے انہوں نے کہاکہ صوبے میں پہلی بار سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ نے آئس نشہ سے بحالی سنٹرڈھائی کروڑ روپے کی لاگت سے قائم کردی جس میں بیک وقت سو مریضوں کو داخل کیاجاسکتاہے انہوں نے کہاکہ سرکاری سکولوں میں ٹاپ پوزیشن ہولڈرز سے طلبہ میں پہلے سال لیپ ٹاپ اور دوسرے سال 35 ہزار روپے تقسیم کردی ہے،، انہوں نے کہاکہ ملک ٹیسٹنگ لیبارٹری کے قیام، دودفعہ فخر پشاور ایوارڈز، سپرنگ فیسٹیول جیسے منفردپروگرامات منعقد کئے جن کو زبردست پذیرائی ملی جبکہ پشاور میں کارپارکنگ مسائل کو مدنظر رکھ کر 38 کروڑ روپے کی لاگت سے پہلی بار صوبے میں پارکنگ سکائی لائن پلازہ کی تعمیر نمکمنڈی میں شروع کردی ہے اس کے علاوہ نمک منڈی فوڈ سٹریٹ پر تین کروڑ روپے لگا کر عالمی معیار کے مطابق فوڈ سٹریٹ قائم کردیا ہے جبکہ سٹی وال جیسے تاریخی اثاثے کو پانچ کروپے روپے کی لاگت سے تزین و آرائش کرکے اس کاقومی ورثے کو محفو ظ کیا گیا ہے جبکہ اس کو نقصان پہنچانے والوں کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کاسلسلہ شروع کردیا ہے ، انہوں نے کہاکہ لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2013 ء بلدیاتی الیکشن کے پہلے سال فعال نہ تھا جس کو فعا ل کر کے خامیاں دور کردی انہوں نے کہاکہ پشاور اورصوبے کی تاریخ میں پہلی بار سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ نے نیشنل اور انٹر نیشنل اداروں کے ساتھ روابط بہتربناکر کھیلوں کے ریکارڈ ایونٹ منعقدکرائے اورپشاور کا سافٹ امیج دنیا کے سامنے پیش کرکے معذور افراد کیلئے ویل چیئرز ٹورنامنٹ، قیدیوں کے لیے جیل فیسٹیول،پس قدافراد کے درمیان کھیلوں کے ٹورنارمنٹ، خواجہ سرا سپورٹس فیسٹیول اور سائیکل ریس منعقد کرائے ہیں جس کو صوبائی حکومت اوردیگر اضلا ع نے خراج تحسین پیش کیا ہے انہوں نے کہاکہ خوشحال بازار سے بیدخل کئے گئے پاس ہولڈرز کیلئے 119 دکانیں تعمیر کرکے انکے خاندانوں کے معاشی مشکلات ختم کردئیے ہیں،جس پر ہم سابق وزیراعلی پرویزخٹک کے شکر گزارہیں،انہوں نے کہاکہ ڈینگی مچھر جیسے خطرناک مرض پر دو مہینوں کے اندر قابو پایاگیاہے اور بطور سٹیرنگ کمیٹی ممبرپشاور اپ لفٹ پروگرام کے تحت 60 کروڑ پروگرام کی لاگت سے باڑہ روڈ، کوہاٹ روڈ، جلیل کبابی روڈاور کینالز روڈزکی تعمیر مکمل کردی ہے،انہوں نے کہاکہ یونین کونسلز لیول پر گلی کوچوں اور نالیوں پر کروڑوں روپے خرچ کردی ہے لیکن اسکے ساتھ ضلع ناظم سیکرٹریٹ تین کروڑ روپے کی لاگت سے تعمیر کردی ہے جبکہ میونسپل انٹر کالج میں 6 کروڑ روپے کی لاگت سے ملٹی سٹوری نیا بلڈنگ بنارہے ہیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...