بٹ خیلہ ،درگئی پرائیویٹ نرسنگ کالج کی طالبات سراپا احتجاج

بٹ خیلہ ،درگئی پرائیویٹ نرسنگ کالج کی طالبات سراپا احتجاج

بٹ خیلہ(بیورورپورٹ) درگئی میں پرائےوےٹ نرسنگ کالج کے طلباءسراپا احتجاج بن گئے ۔ مشتعل طلباءنے مطالبات کے حق میں مین ملاکنڈ شاہراہ ایک گھنٹہ بند کرکے احتجاج کیا اور فیمزکالج درگئی کے انتظامیہ کے خلاف نعرہ بازی کی ۔ فیمزکالج درگئی کے طلباءکالج انتظامیہ کے خلاف احتجاج اور حکومت سے مذکورہ کالج کے رجسٹرےشن نہ ہونے اور طلباءکا قیمتی ایک سال ضائع کرنے کا نوٹس لینے کا مطالبہ کر رہے تھے۔متاثرہ طلباءنے ایک سال سے جمع کی جانے والی فیسوں اور آخراجات کے واپسی کا بھی مطالبہ کیا۔مشتعل طلباءکے احتجاج اور مذکورہ کالج کے گےٹ کے سامنے ملاکنڈ شاہراہ ایک گھنٹہ تک بند رکھنے سے مین ملاکنڈ شاہراہ پر گاڑےوں کی لمبی لمبی قطارےں لگ گئے ۔اس دوران لیویز اہلکاروں ، مسافروں اور طلباءکے درمیان ہاتھا پائی بھی ہوئی ۔اس موقع پر احتجاجی مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے طلباءتنظیم کے رہنماﺅں فواد حسین ،زوار خان اور دےگر مقررین نے کہا کہ ہمیں انصاف فراہم کیا جائے اور فیمز نرسنگ کالج کے انتظامیہ سے باز پُر س کی جائے ۔مقررین نے کہا کہ پرائےویٹ ادارے میں طلباءسے بھاری رقوم بٹورے جارہے ہیں جس پر حکومت اور متعلقہ حکام نے معنی خیز خاموشی آپنائی ہے ۔ مقررین نے کہا کہ اس قسم کا مجرمانہ قانون ہمارے سمجھ سے بالاتر ہے اس لئے ہم ایف آئی اے ، اینٹی کرپشن ، ضلعی انتظامیہ ملاکنڈ سمےت متعلقہ حکام اور صوبائی حکومت سے غےر رجسٹرڈ سکولز اور کالجز کے خلاف تحقیقات اور کاروائی کا مطالبہ کرتے ہیں اور حکومت سے آپیل ہے کہ مذکورہ کالج سے ہماری رقم ہمیں واپس دلائی جائے تاکہ ہمارا دوسرا سال ضائع نہ ہوں ۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے تقرےبا¿¿ دس مہینے قبل مذکورہ کالج کے نرسنگ کلاسز میں داخلہ لیا تھا لیکن مذکورہ کالج کی کوئی قانونی حےثےت نہیں ہے جس پر ہم نے احتجاج کیا اور اسسٹنٹ کمشنر درگئی اور کالج انتظامیہ نے ہمیں آگست تک مسئلہ حل کرنے کی یقین دہانی کرائی لیکن اس کے باوجود ہمارے مسائل حل نہیں ہوئے اور ہمار ا نہ صرف ایک قیمتی سال ضائع ہو گےا ہے بلکہ ہمیں مالی طور پر بھی بہت نقصان اُٹھانا پڑا ہے جبکہ ہم فرسٹ اےئر کے سمسٹر کے امتحان میں بھی حصہ نہیں لے سکتے کیونکہ مذکورہ کالج کے قانونی کاغذات مکمل نہیں ہیں ۔مین شاہراہ پرتقرےبا¿¿ ایک گھنٹہ تک جاری احتجاج کے دوران ٹریفک مکمل طور پر بلاک رہی جس پر گاڑےوں میں بےٹھے مسافر بھی مشتعل ہو گئے اور طلباءکےساتھ گھتم گتھا ہو گئے جس کے بعد روڈ ٹریفک کے لئے کھول دیا گےا ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...