ماحولیاتی آلودگی سے متعلق کیس ،کمیشن برائے ماحولیات نے رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرادی

ماحولیاتی آلودگی سے متعلق کیس ،کمیشن برائے ماحولیات نے رپورٹ سپریم کورٹ میں ...
ماحولیاتی آلودگی سے متعلق کیس ،کمیشن برائے ماحولیات نے رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرادی

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)ماحولیاتی آلودگی سے متعلق کیس میں کمیشن برائے ماحولیات نے رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرادی، عدالت نے ریمارکس دیئے ہیں کہ ماحولیاتی کمیشن کی رپورٹ سپریم کورٹ میں آچکی ہے، رپورٹ کا جائزہ لیا جائیگا،چاروں صوبے،وفاق قانون سازی سمیت ماحولیاتی آلودگی کے مسئلے کا حل نکالیں۔تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں ماحولیاتی آلودگی سے متعلق کیس کی مساعت ہوئی،کمیشن برائے ماحولیات نے رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرادی ،سربراہ ماحولیاتی کمیشن نے کہا کہ وفاق سمیت تمام صوبوں نے باہمی اشتراک سے پالیسی بنانے پراتفاق کیا ہے،تمام صوبے ماحولیات کے حوالے سے مشترکا معیارمقررکریں گے،سربراہ ماحولیاتی کمیشن نے کہا کہ پنجاب میں بھٹوں کے دھوئیں کا مسئلہ کافی حد تک حل کیا گیا ہے،اینٹوں کے بھٹوں کوماحولیات دوست بنانے کیلئے سٹیٹ بینک 6 فیصد شرح سود پرقرضہ دے رہا ہے،ماحولیاتی کمیشن نے کہا کہ ماحولیات سے متعلق پالیسی بنانے کیلیے گلگت بلتستان ، آزادکشمیرکوبھی شامل کرلیا ہے،کمیشن کی سفارشات کوعدالتی حکم کا حصہ بنالیا جائے توعملدرآمد میں آسانی ہوگی،جسٹس عظمت سعید نے کہا کہ کیا سفارشات کےلئے قانون سازی کی ضرورت ہے، ایڈووکیٹ جنرل آفسزکوسفارشات پرعمل سے متعلق کوئی ہدایات ہیں؟صوبائی حکومتوںں کے وکلا نے کہا کہ کمیشن سفارشات کے حوالے سے ہمیں کوئی ہدایات نہیں، جسٹس عظمت سعید نے کہا کہ فضائی آلودگی کے حوالے سے کیا کچھ ہوا ہے؟ڈی جی ماحولیات نے کہا کہ فضائی آلودگی کے حوالے سے سیمینار منعقد کیے گئے ہیں، ہم نے شاپنگ بیگ پربھی پابندی لگا دی ہے، سپریم کورٹ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ماحولیاتی کمیشن کی رپورٹ سپریم کورٹ میں آچکی ہے، رپورٹ کا جائزہ لیا جائیگا،چاروں صوبے،وفاق قانون سازی سمیت ماحولیاتی آلودگی کے مسئلے کا حل نکالیں،عدالت نے کیس کی سماعت گرمیوں کی چھٹیوں کے بعد تک ملتوی کردی۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد


loading...