پاکستان کا مقبوضہ کشمیر کا خصوصی درجہ ختم کرنے پر اقوام متحدہ میں جانے کا فیصلہ

پاکستان کا مقبوضہ کشمیر کا خصوصی درجہ ختم کرنے پر اقوام متحدہ میں جانے کا ...
پاکستان کا مقبوضہ کشمیر کا خصوصی درجہ ختم کرنے پر اقوام متحدہ میں جانے کا فیصلہ

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان نے مقبوضہ کشمیر کا خصوصی درجہ ختم کرنے پر اقوام متحدہ میں جانے کا فیصلہ کرلیا، وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کی جانب سے مسئلہ کشمیر کو اندرونی معاملہ بالکل غلط ہے ،بھارت کے غیرقانونی اقدام کے خطے میں بھیانک اثرات مرتب ہوں گے ،پاکستان بھارتی موقف کومستر دکرتا ہے ،کشمیر متنازعہ علاقہ ہے اور اقوام متحدہ کی قراردادوں میں ہے ،انہوں نے کہا کہ پاکستان نے مسئلہ کشمیر پر سلامتی کونسل میں جانے کا فیصلہ کیا ہے ،انہوں نے کہا کہ جواہر لعل نہرونے کہاتھا کہ مقبوضہ کشمیر کا فیصلہ کشمیر عوام کرے گی ،نہر و نے تسلیم کیا کشمیر بھارت کا حصہ نہیں ،نہرو نے تسلیم کیا کہ کشمیر سے متعلق بھارت یکطرفہ فیصلہ نہیں کر سکتا ۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ 28 ملکوں کوبھارتی اقدام پر تشویش سے آگاہ کردیاہے،ان ممالک کو قومی سلامتی کمیٹی کے فیصلوں سے بھی آگاہ کیا ہے ،انہوں نے کہا کہ بھارت کی جانب سے مسئلہ کشمیر کو اندرونی معاملہ بالکل غلط ہے ،کیا70 سال پہلے کشمیر میں فلاح و بہبود پر قدغن تھی ؟،بھارت سے پوچھنا چاہتا ہوں کیا کشمیر کو جیل بنا کر فلاح و بہبود کا قدم اٹھایا ہے ،شاہ محمود قریشی نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں 9 لاکھ بھارتی فوجی تعینات ہیں ،کیا مقبوضہ کشمیر کو جیل بنانا فلاح و بہبود کا اقدام ہے ،انہوں نے کہا کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں مکمل کرفیو نافذ کررکھا ہے ،مقبوضہ کشمیر میں خونریزی کا خدشہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ نہرو نے 14 بار وعدے کئے کہ کشمیر کا فیصلہ اس کی عوام کی خواہش کے مطابق ہوگا،کشمیر کے مستقبل کا فیصلہ صرف کشمیری ہی کر سکتے ہیں ،انہوں نے کہا کہ لوگ سبھا نے 31 مارچ 1955 کو کہاکہ کشمیری ہی کشمیر کا فیصلہ کر سکتے ہیں ،جون 1998 میں سلامتی کونسل میں کشمیر کے معاملے پر بحث کی گئی ،انہوں نے کہا کہ آج صبح امریکی وفد سے کہا کہ پاکستان نے ہمیشہ مذاکرات کی بات کی ،بھارت نے کہا کشمیر معاملے پر امریکا سے مشاورت ہوئی جس کو ایلس ویلز مسترد کردیا،لنزے گراہم نے اپنی ٹوئٹ میں کشمیر معاملے پر بھارتی اقدام کی مخالفت کی ،یورپی یونین کشمیر پر مذاکرات میں کرداراداکرسکتی ہے تو پاکستان تیار ہے ،ہم معاملے سے پیچھے نہیں ہٹیں گے ،شاہ محمود قریشی نے کہا کہ کرتارپورراہداری پر ہمارا موقف برقرا ر ہے ،کرتار پور راہداری پرکام جاری رہے گا،وزیر خارجہ نے کہا کہ سمجھوتہ ایکسپریس بند کرنے کافیصلہ کیاگیا ہے ،پاکستان کی جانب سے فضائی حدود بند کرنے کی خبر غلط ہے ،پاکستان نے فضائی حدود محدود نہیں کی ،ان کا کہناتھا کہ بھارت کشمیر کے معاملے سے توجہ ہٹانے کیلئے کوئی بھی ڈرامہ کر سکتا ہے ،پاکستان سفارتی سطح اور قانونی آپشنزپر غور کرے گا،ہم نے کسی بھی بھارتی جارحیت کیخلاف چوکس رہنا ہے ،

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد


loading...