دھماکوں کے بعد ہسپتال زخمیوں سے بھر گئے، مزید گنجا ئش ختم، پاکستان کا اظہار یکجہتی، 8ٹن امدادی سامانا بیروت پہنچ گیا

دھماکوں کے بعد ہسپتال زخمیوں سے بھر گئے، مزید گنجا ئش ختم، پاکستان کا اظہار ...

  

بیروت (مانیٹرنگ ڈیسک،آئی این پی) بیروت دھماکوں  کے بعد ملک میں خوراک لانے والی واحد بندر گاہ تبا ہ ہوگئی، ہسپتالوں میں مریضوں کی گنجائش ختم ہوچکی ہے۔بیروت کے عوام سب کچھ کھو چکے ہیں، اب تک پہنچنے والی عالمی امداد نا کافی ہے، ہسپتالوں میں گنجائش سے کئی گنا زیادہ زخمی موجود ہیں، بین الاقوامی این جی اوز نے عالمی برادری سے مزید امداد کی اپیل کردی۔فرانس نے لبنان کی امداد کے لئے اتوار کو ڈونرز کانفرس کے انعقاد کا اعلان کردیا جس میں یورپی یونین بھی شرکت کرے گی۔ملبے میں دبے افراد کی تلاش کے لئے دھماکے کی جگہ پر ملبہ ہٹانے کا کام جاری ہے۔ لبنان کے عوام نے دھماکے کا ذمہ دار حکومت کو قرار دیتے ہوئے پارلیمان کے سامنے مشتعل افراد نے مظاہرہ بھی کیا۔ علاوہ ازیں  پاکستان کی طرف سے لبنان کے عوام کے ساتھ یک جہتی کے اظہار اور  بیروت میں ہونے والے بڑے دھماکوں کے نتیجے میں متاثرہ افراد کی تکالیف اور پریشانیوں میں کمی کے لئے آٹھ ٹن امدادی سامان  بیروت پہنچ گیا۔ امدادی سامان میں ادویات اور خوراک بھی شامل ہے۔ لبنان میں پاکستان کے سفیر نجیب درانی نے پاکستان کی طرف سے بھجوایا جانے والا امدادی سامان رفیق حریری بین الاقوامی ہوائی اڈے پرحوالے کیا۔ لبنان کی خارجہ و غیرملکی باشندوں سے متعلق امور کی وزارت اور لبنانی مسلح افواج کے اعلی حکام نے امدادی سامان وصول کیا۔ 

سامان لبنان 

مزید :

صفحہ اول -