امریکی وزیر خارجہ کا پاکستانی ہم منصب، کو فون دو طرفہ تعلقات، افغان امن عمل پر بات چیت

امریکی وزیر خارجہ کا پاکستانی ہم منصب، کو فون دو طرفہ تعلقات، افغان امن عمل ...

  

 اسلام آباد/ واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے اپنے پاکستانی ہم منصب شاہ محمود قریشی سے ٹیلی فونک رابطہ کرکے دو طرفہ تعلقات، خطے کی صورتحال اور افغان امن عمل کے حوالے سے گفتگو کی ہے۔دونوں رہنماؤں کے درمیان خطے میں امن واستحکام کیلئے کی جانے والی کاوشوں سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ مائیک پومپیو کا دوران گفتگو کہنا تھا کہ مشترکہ اہداف کو آگے بڑھانے اور شراکت داری میں اضافے کا منتظر ہوں۔وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ خطے میں قیام امن کی کاوشوں میں پاکستان اور امریکا اتحادی ہیں۔ لویا جرگہ کے انعقاد سے بین الافغان مذاکرات کی راہ ہموار ہوگی۔انہوں نے افغان امن عمل کی کامیابی کیلئے بین الاافغان مذاکرات کے جلد انعقاد پر زور دیتے ہوئے کہا کہ افغانستان کے مسئلے کے مستقل سیاسی حل کیلئے معاونت جاری رکھیں گے۔وزیر خارجہ نے مائیک پومپیو کو مقبوضہ کشمیر میں بھارتی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں سے بھی آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ 5 اگست کو بھارتی غیر قانونی اقدامات کو ایک سال مکمل ہوا۔ اسی دن سیکورٹی کونسل میں کشمیر پر مباحثہ نے ایک بار پھر کشمیر کی متنازع حیثیت واضح کر دی۔ وزیر خارجہ نے مباحثے میں امریکا کی شرکت پر ان کا شکریہ ادا کیا۔وزیر خارجہ نے امریکی وزیر خارجہ کو بھارت کی جانب سے مقبوضہ جموں و کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں اور نفرت انگیز پالیسیوں سے آگاہ کیا۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ہمیں قوی امید ہے کہ کشمیریوں پر ڈھائے جانے والے مظالم کی طرف عالمی برادری کی توجہ سے، مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ سیکورٹی کونسل کی قراردادوں اور نہتے کشمیریوں کی امنگوں کے مطابق حل کرنے میں مدد ملے گی

 پومپیو ٹیلی فون

  اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے لبنان کے وزیر خارجہ کو فون کر کے بیروت سانحے پر حکومت پاکستان اور قوم کی طرف سے تعزیت کا اظہار کیا۔وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا بیروت دھماکوں اور شدید جانی و مالی نقصان پر دل گرفتہ ہے، پاکستان اس مشکل گھڑی میں اپنے لبنانی بھائیوں کے ساتھ کھڑا ہے، اس المناک سانحے میں لبنان کی حکومت اور عوام کا عزم و حوصلہ قابلِ تحسین ہے۔دونوں وزرائے خارجہ نے حالات معمول پر آنے کے بعد جلد ملاقات پر اتفاق کیا۔

شاہ محمود 

مزید :

صفحہ اول -