پنجاب کے وہ سیاستدان جن سے وزیراعظم شدید ناراض ہوگئے 

پنجاب کے وہ سیاستدان جن سے وزیراعظم شدید ناراض ہوگئے 
پنجاب کے وہ سیاستدان جن سے وزیراعظم شدید ناراض ہوگئے 

  

لاہور(ویب ڈیسک )وزیراعظم عمران خان اتحادی جماعتوں سے شدید ناراض ہیں ، گزشتہ روز بھی کسی اتحادی سے ملاقات نہ کی، اتحادی جماعتوں کے حلقوں میں لگائے ہوئے 2اہم اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز، ڈی پی اوز سمیت 5افسروں کی شکایات پر انہیں ہٹانے کا حکم دیدیا،آئندہ ہفتے پنجاب کے اہم افسروں کے تقرروتبادلے کر دئیے جائیں گے ، مرحلہ وار پولیس اور بیوروکریٹس کی رپورٹس پر ان کو تبدیل کیا جائے گا،پنجاب حکومت کے اہم ذمہ داران کے مطابق عمران خان نے اجلاسوں میں واضح کیا کہ پنجاب کا کوئی عہدیدار ہو، بیوروکریسی ہو، یا کوئی اتحادی ہو کرپشن،بے ضابطگیوں اور میرٹ کے برعکس اقدامات پر کسی کو معافی نہیں ہوگی، جس نے ایسا کیا اسے فوری طورپر فارغ کر دیں گے ،

روزنامہ دنیا کے مطابق وزیراعظم نے بتایا کہ بیوروکریسی کو حکم دیا کہ کسی سیاسی، اتحادی کی ایسی سفارش نہ مانیں جس میں غلط کام ہو، صرف میرٹ پر کام کریں، اتحادیوں کی ٹینشن لینے کی ضرورت نہیں،سب کو پتا ہے کہ پنجاب میں اتحادیوں کے ساتھ ملکر ہماری حکومت ہے ، لیکن کسی کی بھی پروا نہ کریں، صرف عوام کو سہولیات دیں کسی کو یکطرفہ سپورٹ نہ کریں، میرٹ پر کام کریں، کچھ روز تک بیوروکریسی اور پولیس میں اکھاڑ پچھاڑ ہو گی پھر جو تعینات ہو ں گے ان کو کچھ عرصہ تک تعینات ہی رہنے دیا جائے گا ،فوری تبدیلیاں نہیں کریں گے ، وزیراعظم عمران خان سے ممبران قومی اسمبلی نے شکایات کے انبار لگادئیے ،پولیس،پٹواری کلچر پر تنقید کی اور ایس ایچ اوز، ڈی ایس پیز، اسسٹنٹ کمشنرز پر کرپشن کے الزامات کی بھرمار کر دی، کہتے ہیں تھانہ کلچر تبدیل ہی نہیں ہو سکا۔

اجلاسوں میں موجود ذرائع نے حوالے سے روزنامہ دنیا میں محمد حسن رضا سے نے لکھا  کہ وزیراعظم نے کہاکہ پنجاب سے بار بار ایک ہی بات سننے کو ملتی ہے پنجاب میں کیوں معاملا ت کو بہتر نہیں بنایا جا تا؟ممبران قومی اسمبلی نے کہاکہ ہمارے ضلع میں ترقیاتی سکیموں کو روک دیا گیا ہے فنڈز پنجاب حکومت کی جانب سے دئیے ہی نہیں جارہے ، حکومتی عہدیداروں سے پوچھیں کہ کیوں ایسا کررہے ہیں، صاف پانی میسر نہیں، واسا کا انتہائی خراب نظام ہے ، جہاں دیکھیں وہاں مسائل ہی مسائل ہیں، جس پر عمران خان نے کہاکہ اس کا نوٹس لے چکا ہوں، انہوں نے کہا عثمان بزدار آئندہ ہفتے فیصل آباد کا دورہ کریں اور ان کے جوبھی معاملات ہیں ان کو فوری طورپر حل کیا جائے ۔

بیوروکریسی اجلاس میں جب آئی جی پنجاب نے بریفنگ دی تو عمران خان نے کہاکہ مجھے معلوم ہے کہ کرپشن نچلی سطح سے نہیں بلکہ اوپر سے شروع ہوتی ہے لیکن احتساب سب کا ہو گا، اس وقت ہمارے پاس کرپشن اور نااہلی کی کوئی گنجائش موجود نہیں ، انہوں نے بیوروکریسی اجلاس میں دو بارکہا کہ بیوروکریسی اور پولیس پر کوئی سیاسی دباؤ نہیں ہوگا، کھل کر میرٹ پر کام کریں، حکومتی ذرائع نے دعویٰ کیا کہ منڈی بہاؤالدین، گجرات کے ڈپٹی کمشنرز، اور ڈی پی اوز کو آئندہ چند روز تک ہٹا دیاجائے گا، جبکہ پنجاب حکومت کے اہم ذمہ دار نے بتایا کہ اتحادی جماعتوں کے رہنما کوشش کر رہے ہیں کہ ان کے اضلاع میں تعینات افسروں کو نہ ہٹایا جائے ، تحریک انصاف کے رہنماؤں کی جانب سے بھی اتحادی جماعتوں کے بعض حلقوں میں تعینات کروائے گئے پولیس اور ضلعی افسروں پر شدید تحفظات تھے ۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -سیاست -