سعودی عرب کی جانب سے موخر ادائیگی پر سالانہ 3 اعشاریہ 2 ارب ڈالر مالیت کے تیل کی فراہمی بندہونے کاانکشاف

سعودی عرب کی جانب سے موخر ادائیگی پر سالانہ 3 اعشاریہ 2 ارب ڈالر مالیت کے تیل ...
سعودی عرب کی جانب سے موخر ادائیگی پر سالانہ 3 اعشاریہ 2 ارب ڈالر مالیت کے تیل کی فراہمی بندہونے کاانکشاف

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سعودی عرب کی جانب سے موخر ادائیگی پر سالانہ 3 اعشاریہ 2 ارب ڈالر مالیت کے تیل کی فراہمی رواں سال مئی سے بندہونے کاانکشاف ہوا ہے۔

نجی ٹی وی 92 نیوز کے مطابق ترجمان پٹرولیم ڈویژن کاکہنا ہے کہ پاکستان کو موخر ادائیگیوں پر سالانہ تیل کی فراہمی کامعاہدہ دو مہینے قبل ختم ہو چکا ہے ،پاکستان کومعاہدے کی تجدید کیلئے سعودی حکومت کے فیصلے کاانتظار ہے ،ترجمان کاکہنا ہے کہ پاکستان کی درخواست پر سعودی حکومت کاکوئی جواب موصول نہیں ہوا۔

نجی ٹی وی کے مطابق پاکستان سعودی عرب کی جانب سے ادھار تیل کی سہولت کاخاطرہ خواہ فائدہ نہ اٹھاسکا،گزشتہ مالی سال میں صرف80 کروڑ ڈالر مالیت کے تیل کی خریداری کی گئی ۔

واضح رہے کہ نومبر 2018 میں سعودی عرب نے پاکستان کیلئے 6 اعشاریہ 2 ارب ڈالر کے امدادی پیکیج کا اعلان کیاتھا،سالانہ 3 اعشاریہ 2 ارب ڈالر مالیت تیل کی فراہمی پیکیج کاحصہ تھا۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -