"کشمیر کیلئے بات کرنے سے کوئی نہیں روک سکتا، اپنے بیانات پر معافی نہیں مانگوں گا" مہاتیر محمد ڈٹ گئے

"کشمیر کیلئے بات کرنے سے کوئی نہیں روک سکتا، اپنے بیانات پر معافی نہیں مانگوں ...

  

کوالا لمپور (ڈیلی پاکستان آن لائن) ملائیشیا کے سابق وزیر اعظم ڈاکٹر مہاتیر محمد نے کہا ہے کہ بھارت کی جانب سے کشمیر کی خصوصی حیثیت تبدیل کرنے کا اقدام غیر قانونی ہے، انہیں اب کشمیر پر بات کرنے سے کوئی نہیں روک سکتا۔

ڈاکٹر مہاتیر محمد نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ انہیں اب کشمیر کے معاملے پر بولنے سے کوئی نہیں روک سکتا، ان کے کشمیر پر بیانات کی وجہ سے بھارت کو برآمدات میں فرق پڑا تھا لیکن انہیں اپنے بیانات پر کوئی افسوس نہیں ہے۔

ملائیشیا کے سابق وزیر اعظم نے کہا کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر کے حوالے سے 5 اگست کو جو اقدامات اٹھائے وہ غیر قانونی ہیں، انسانیت کیلئے آواز اٹھائی، اب انہیں کسی کے بائیکاٹ کی کوئی پرواہ نہیں ہے، انہیں کشمیر پر بولنے سے کوئی نہیں روک سکتا۔

ڈاکٹر مہاتیر محمد کا کہنا تھا کہ کشمیر پر جو بھی کہا اس پر معافی نہیں مانگوں گا، مقبوضہ کشمیر میں 9 لاکھ فوج کے ذریعے کشمیریوں کو سخت فوجی محاصرے میں زندگی گزارنے پر مجبور کردیا گیا ہے، عالمی برادری مقبوضہ کشمیر کے لوگوں کی حالت زار کا نوٹس لے۔

مزید :

بین الاقوامی -