سعودی عرب ساختہ "کافی مشین" نے ڈنمارک میں میدان مار لیا

سعودی عرب ساختہ "کافی مشین" نے ڈنمارک میں میدان مار لیا

ریاض‘ ڈنمارک(آن لائن)ڈنمارک میں ہونے والے انٹرنیشنل تخلیقی کمرشل کپ کے عالمی مقابلے میں سعودی عرب کی تیارکردہ آٹومیٹک "کافی مشین" کو مقابلے میں شامل تجارتی نوعیت کی مصنوعات کی پانچویں بہترین پراڈکٹ کا اعزاز مل گیا۔ مقابلے میں مجموعی طور پر 42 ممالک کی مصنوعات شامل کی گئی تھیں۔ آخری مرحلے میں کروشیا، جرمنی، ڈنمارک، اٹلی اور سعودی عرب کو بہترین کمرشل مصنوعات پیش کرنے والے ملک قرار دیا گیا۔العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مشہور عرب"کافی" کی تیاری کے لیے بنائی گئی سعودی خاتون لطیفہ الوعلان کی خودکار الیکٹرک کافی مشین کئی اہم خصوصیات کی حامل ہے۔ جو کم وقت میں بہترین کافی تیار کرنے صلاحیت رکھتی ہے۔ ڈنمارک کے شہر کوپن ہیگن میں ہونے والے اس کمرشل مقابلے میں سعودی خاتون وعلان نے اپنی تیارکردہ دیسی کافی مشین بھی شامل کر رکھی تھی۔ مقابلے میں اسے پانچویں بہترین پراڈکٹ قرار دیا گیا ہے۔ادھر"تخلیقی کمرشل کپ" کے سعودی پروگرام کی ڈائریکٹر می بنت عمر طیبہ نے بتایا کہ ریاض کا عالمی کمرشل کپ میں شامل ہو کر اہم پوزیشن حاصل کرنا ایک مثبت پیش رفت ہے۔ ڈنمارک مقابلے میں سعودی عرب کی کامیابی سے چھوٹی صنعت کو فروغ ملنے کے ساتھ ساتھ مختلف مصنوعات تیار کرنے والوں کی حوصلہ افزائی ہو گی۔طیبہ کا مزید کہنا تھا کہ لطیفہ الوعلان کی جانب سے تیارکردہ کافی مشین کو ڈنمارک مقابلے میں پانچواں مقام حاصل ہونے سے نہ صرف سعودی عرب کی مصنوعات کی عالی منڈی میں وقعت بڑھے گی بلکہ سعودی کافی "یتوق" کو بھی پذیرائی ملے گی۔عالمی کمرشل کپ کے مقابلے سعودی عرب کی نمائندگی کرنے والی لطیفہ وعلان نے مقابلے میں پانچویں پوزیشن حاصل کرنے پر مسرت کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ عالمی مقابلے میں سعودی عرب کی تیارہ کردہ کئی دوسری مصنوعات بھی شامل تھیں، جو شائقین کی توجہ کا مرکز رہیں۔ انہوں نے کہا کہ قدرتی تیل کے ساتھ ساتھ اب مقامی صنعت بھی سعودی عرب کی معاشی ترقی کا ایک اہم جزو بن چکی ہے۔

ریاض میں میڈیا سے گفتگو کے دوران لطیفہ الوعلان نےی"کافی مشین" کی کامیابی کو سعودی عرب کی صنعت کی کامیابی قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ وہ دنیا بھر میں سعودی تہذیب وثقافت کے فروغ کے لیے کوشاں ہیں اور یہ مساعی جاری رکھی جائیں گی۔

مزید : عالمی منظر