حکومت پانچ سال پورے کر گئی تو ملک ترقی کے سنہرے دور میں داخل ہو جائے گا

حکومت پانچ سال پورے کر گئی تو ملک ترقی کے سنہرے دور میں داخل ہو جائے گا
حکومت پانچ سال پورے کر گئی تو ملک ترقی کے سنہرے دور میں داخل ہو جائے گا

  

ہیلو میرے پیارے پیارے دوستو! سنائیں کیسے ہیں امید ہے کہ اچھے ہی ہوں گے۔دوستو! رُت بدلی موسم بدلا ۔ماہ دسمبر شروع ہو چکا ہے، گرمی کا زور بھی ٹوٹ چکاہے ۔سردی کی لہر بھی عوام کو ٹھنڈا کر رہی ہے اور ٹھنڈے موسم میں شدید بیماریاں بھی اپنا کام دکھا رہی ہیں۔ کہا جا رہا ہے کہ بارش نہیں ہو رہی اور اگر بارش ہو جائے تو بیماریوں سے آرام مل سکتا ہے۔ بہت سے دوست کہتے ہیں کہ خشک سردی میں انتہائی احتیاط برتنی چاہئے۔ نزلہ زکام ، گلہ خراب بخار ،وغیرہ بھی بدلتے موسم کی وجہ سے ہی ہوتا ہے۔ دیکھا جائے تو، موسم بدلتے ہی بہت سے دوست کیا، بلکہ شہریوں کی بڑی تعداد ، بکسوں میں لپیٹے کمبل ، سوئیٹر ،رضائیاں وغیرہ بھی نکالنے شروع کر دیتے ہیں اور گرم کپڑے بھی نکلنے شروع ہو جاتے ہیں اور نہ صرف یہ بلکہ بازاروں میں بھی گرم کپڑوں ، سوئیٹر، چادر ، جیکٹ وغیرہ کی خریداری میں اضافہ ہو جاتا ہے، جب کسی چیز کی مانگ میں اضافہ ہو تو دکاندار از خود اشیاء کے نرخ بڑھا دیتے ہیں اور پھر خود ساختہ مہنگائی سے عوام توچیختے ہیں، لیکن دکاندار جی بھر کر روپیہ کماتے ہیں۔

تاہم مہنگائی سے یاد آیا کہ اگر مہنگائی میں کمی کر نی ہے تو سب سے پہلے پٹرول کی قیمتوں میں کمی کی جائے ، باقی اشیاء ازخود سستی ہو جائیں گی، لگتا ہے کہ ہمارے حکمرانوں نے بھی گویا اِسی فارمولے پر عمل کرنے کی ٹھان لی،جی ہاں اِسی لئے توملک بھر میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں نمایا ں کمی ہوئی اور یہ کمی آج سے قبل شائد کسی حکومت نے نہ کی ہو۔ آصف علی زرداری کی حکومت میں پٹرول کی قیمت 100 روپے سے زیادہ تھی، لیکن نواز شریف کی حکومت کے بعد 2014ء میں پٹرول انتہائی سستا کر دیا گیا اور خبر تو یہ بھی ہے کہ پٹرول کی قیمتوں میں جلد مزید کمی کی جائے گی۔پٹرول سستا ہونے سے بھی عوام کے چہروں کی رونقیں لوٹ آئی ہیں، غریبوں کے مرجھائے دل بھی خوشی سے باغ باغ سے ہو گئے اور عوام موجودہ حکمرانوں کی صحت یابی اور کامیابی کے لئے دُعا گو ہو گئے ، کہ چلو کچھ تو میاں نواز شریف نے اچھا کیا ،تاہم بہت سے دوست اب بر ملا کہہ رہے ہیں کہ وزیراعظم پاکستان نے عوام کو خوشیاں دینے کا جو ارادہ کیا ہو ا ہے اسے ضرور اپنے انجام خیر تک پہنچائیں گے۔

یہ بات بھی حقیقت ہے کہ پٹرول کی قیمتوں میں کمی سے اب ملک بھر میں ٹرانسپورٹ کرایوں میں بھی نمایاں کمی کر دی گئی ہے،دیگر اشیائے زندگی کی قیمتوں میں بھی نمایاں کمی ہو گی۔کہا جا رہا ہے کہ اب موجودہ قیمتوں میں جس قدر کمی ہوئی ہے، اس سے دس سال پرانی نہج پر واپس آگئی ہیں اور یہ میاں نواز شریف حکومت کا ایک سنہری کارنامہ ہے کہ ملک دس سال پہلے والی حالت میں آ گیا اور ہمارے بہت سے دوست اسی بات پر تو بر ملا کہہ رہے ہیں کہ یہ ترقی نہیں تو اور کیا ہے۔ رہی بات ترقی کی تو ہمارے بہت سے دوست کہہ رہے ہیں کہ خیبر سے لے کر کراچی تک ملک بھر کی اہم شاہراہیں دیکھ لیں آپ کو ہر طرف تعمیر و ترقی کے عظیم شاہکار نظر آئیں گے ۔ ترقی کی چھوٹی سی مثال تو صرف موٹر وے ہی ہے جسے بنے عرصہ ہو گیا، لیکن آج بھی لاکھوں پاکستانیوں کا روز گار موٹر وے سے وابستہ ہے۔

میٹرو بس سروس ہی دیکھ لیں جسے پاکستان بھر میں کامیابی کے بعد اب ملک بھر میں رواں دواں کیا جائے گا۔ یہی تو خوشحالی و ترقی کا دور ہے اور ایسا دور میاں برادران کے حکومت میں ہوتے ہوئے ہی آسکتا ہے۔ ہمارے بہت سے دوست کہتے ہیں کہ اگر نواز حکومت پانچ سال پورے کر گئی تو ملک ترقی کے سنہرے ترین دور میں داخل ہو چکا ہو گا۔یہ بات حقیقت ہے کہ پہلے بھی دو بار میاں نواز شریف منتخب ہوئے، لیکن انہیں مدت پوری نہ کر نے دی گئی، ان کی حکومت پر شب خون مارا گیا ، انہیں اقتدار سے محروم کیا گیا اور میاں برادرا ن کو طویل جلا وطنی بھی گزارنی پڑی ، پھر ان کی جلاوطنی کے دن ختم ہوئے اور دوبارہ انتخابات میں حصہ لیا اور عوام نے انہیں اعتماد بخشا اور ایک بار پھر مسند اقتدار پر نواز شریف کو بٹھایا۔ میاں برادران نے ثابت کر دیا کہ جس اعتماد کے قابل عوام نے انہیں سمجھا وہ درست تھا،اِسی لئے تو عوام کو یہ یقین ہے کہ اگر حکومت پانچ سال پورے کر گئی، تو پاکستان ضرور اس مقام پر ہو گا، جہاں دوسری قوموں کے لئے بھی پاکستان کا نام باعث رشک ہو گا۔ اجازت چاہتے ہیں دوستو ملتے ہیں آپ سے ایک بریک کے بعد اللہ نگہبان، رب راکھا ۔

مزید :

کالم -