چیف الیکشن کمشنر دھاندلی الزامات کے ازالہ کےلئے احکامات صادر کریں، کامران سیف

چیف الیکشن کمشنر دھاندلی الزامات کے ازالہ کےلئے احکامات صادر کریں، کامران ...

  

لاہور ( جنرل رپورٹر) پاکستان مسلم لیگ ق کے راہنما وجوائینٹ سیکرٹری پاکستان مسلم لیگ لاہور میاں کامران سیف نے کہا ہے کہ نئے چیف الیکشن کمشنر مختلف سیاسی جماعتوں کی جانب سے دھاندلی الزامات کے ازالہ کے لیے احکامات صادر کریں انہوں نے کہا کہ چند حلقوں کی دوبارہ گنتی اور ووٹوں کی تصدیق سے دھاندلی کے الزامات کی حقیقت کھل کر سامنے آجائے گی ۔انہوںنے کہا کہ اب تک جتنے بھی حلقوں میں دوبارہ گنتی اور ووٹوں کی تصدیق ہوئی ہے اس سے ثابت ہوتا ہے کہ 2013ءکے انتخابات میں عوامی مینڈیٹ چرایا گیا ۔اس لیے تمام صوبائی الیکشن کمیشن کے ممبران کو فارغ کیا جائے ۔انہوں نے کہا کہ 2013ءکے انتخابات میں مسلم لیگ کو دھاندلی کے ذریعے شکست دی گئی ۔پورے پاکستان کو علم تھا کہ مسلم لیگ عوامی قیادت کے ذریعے انتخابات جیت جائے گی ۔میاں کامران سیف نے کہا کہ مسلم لیگ نے پنجاب بھر میں بڑے بڑے جلسے منعقد کرنے شروع کردیئے ہیں جس سے دوسری جماعتوں کی آنکھیں کھلنا شروع ہوگئی ہیں ۔مسلم لیگ کے جلسوں میں عوام کی بھر پور شمولیت اس کی حقیقی مقبولیت کی مظہر ہے اصلی مسلم لیگی آج بھی ہمارے ساتھ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما سردار ذوالفقار علی خان کھوسہ کی طرف سے بھی مسلم لیگ ن پر دھاندلی کا الزام عائد کیا گیا ہے اور کہا ہے کہ سیاسی کیرئیر میں ن لیگ کے امیدوار دھاندلی کے مرتکب ہوئے ہیں۔ن لیگ کے سینئر راہنما کا یہ بیان دھاندلی پلان کو ثابت کرتا ہے اس لیے الیکشن کمیشن اس کا نوٹس لے اور مختلف سیاسی جماعتوں کے مطالبہ پر مخصوص حلقوں میں دوبارہ گنتی اور ووٹوںکی فوری تصدیق کی جائے تاکہ دھاندلی الزامات کی صداقت معلوم ہوسکے ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -