بھارت کا فوجی کیمپ پر حملہ کاپاکستان کوذمہ دارٹھہرانا قابل مذمت ہے،ڈاکٹر وسیم

بھارت کا فوجی کیمپ پر حملہ کاپاکستان کوذمہ دارٹھہرانا قابل مذمت ہے،ڈاکٹر ...

  

لاہور(سٹاف رپورٹر) امیر جماعت اسلامی صوبہ پنجاب و پارلیمانی لیڈر صوبائی اسمبلی ڈاکٹر سید وسیم اخترنے کہاہے کہ بھارتی حکومت کی جانب سے پاکستان کو مقبوضہ کشمیر میں فوجی کیمپ پر حملہ کاذمہ دارٹھہرانااور سنگین نتائج کی دھمکیاں دیناانتہائی قابل مذمت ہے۔بھارت تحریک آزادئ کشمیر کو دہشت گردی سے منسلک کرنے کی ناکام کوشش کررہا ہے۔عالمی برادری اس کانوٹس لے۔حالانکہ دنیا جانتی ہے کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں خود ریاستی دہشت گردی کررہا ہے۔یوں محسوس ہوتا ہے کہ بھارتی حکومت پاکستان کی دشمنی میں اپنے ہوش وحواس کھو بیٹھی ہے۔کسی قسم کاکوئی بھی واقعہ ہوجائے تو اس کا الزام پاکستان پر لگانابھارتی سرکاراور ذرائع ابلاغ کاوطیرہ بن چکا ہے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان ہر قسم کی دہشتگردی کی بھر انداز میں مذمت کرتا ہے۔کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے اور ہندوستان کے غاصبانہ قبضے کے خلاف جدوجہد کرنا کشمیریوں کا بنیادی حق ہے۔انہوں نے کہاکہ انڈیا ایک طرف مذاکرات کی بات کرتا ہے تو دوسری جانب مقبوضہ کشمیر میں مظالم ڈھارہا ہے۔بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر میں20ہزار سے زائد خواتین کی بے حرمتی،ہزاروں بچوں کو یتیم اور لاکھوں افراد کو ناحق لقمہ اجل بنادیا ہے۔ماورائے آئین وقانون لوگوں کو اٹھانے کاسلسلہ جاری ہے۔ڈھونگ انتخابات نے مودی حکومت کا حقیقی چہرہ دنیا کے سامنے عیاں کردیا ہے۔انڈین حکومت کشمیر میں خود دہشت گردی کوہوادے رہی ہے۔ڈاکٹر سید وسیم اختر نے کہاکہ حکومت پاکستان بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں فوجی کیمپ پر حملے کا ملبہ پاکستان پر ڈالنے اور سنگین نتائج کی دھمکیاں دینے پر اس سارے معاملے کوعالمی فورمز پر اٹھائے۔دنیاکوباور کرایاجائے کہ ہندوستان’’بغل میں چھری اور منہ میں رام رام‘‘کی پالیسی پر گامزن ہے۔جب تک کشمیرسے بھارتی فوجیوں کامکمل انخلاء،بلوچستان میں مداخلت اور آبی جارحت ہندوستان کی طرف سے بند نہیں کردی جاتی جنوبی ایشیاء میں امن کاخواب کبھی شرمندہ تعبیر نہیں ہوسکتا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -