بجلی کے واجبات کی عدم ادائیگی ، آئی پی پیز نے حکومت پاکستان کی ضمانت ضبط کرنے کی دھمکی دیدی

بجلی کے واجبات کی عدم ادائیگی ، آئی پی پیز نے حکومت پاکستان کی ضمانت ضبط کرنے ...
بجلی کے واجبات کی عدم ادائیگی ، آئی پی پیز نے حکومت پاکستان کی ضمانت ضبط کرنے کی دھمکی دیدی

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) بجلی پیدا کرنے والے نجی ادارے انڈیپینڈنٹ پاور پروڈیوسرز (آئی پی پیز)نے بجلی کے واجبات کی عدم ادائیگی پر حکومت پاکستان کی ضمانت ضبط کرنے کی دھمکی دیدی ہے ۔

آئی پی پی کی ایڈوائزری کونسل کے مطابق حکومت پاکستان نے ان کے 40 بلین روپے ادا کرنے ہیں جس پر سات آئی پی پیز نے حکومت پاکستان کو 26 نومبر 2014 کو باضابطہ طور پر مطلع کیا ہے کہ نیشنل ٹرانسمیشن اینڈ ڈسپیچ کمپنی لمیٹڈ پاکستان (این ٹی ڈی سی) / واپڈا کی طرف 26بلین واجب الادا ہے مزید تین آئی پی پیز نے حکومتِ پاکستان کو یکم اور دو دسمبر کو باضابطہ طور پر مطلع کیا کہ حکومت نے ان کو 14 بلین روپے 16 دسمبر تک ادا کرنے ہیں۔

آئی پی پی کی ایڈوائزری کونسل کا کہنا ہے کہ اگر 10 دسمبر تک یہ رقم آئی پی پیز کو ادا نہیں کی گئی تو حکومتِ پاکستان کی ضمانت ضبط ہو جائے گی جبکہ چار مزید آئی پی پیز اگلے چند دنوں میں حکومت کو ادائیگی کے سلسلے ہی میں نوٹس جاری کرنے لگے ہیں۔

حکومت کا موقف لینے کے لیے وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار، پانی و بجلی کے وفاقی وزیر خواجہ آصف سے رابطے کی کوشش کی گئی لیکن کامیابی نہیں ہو سکی۔

پانی و بجلی کے سابق سیکریٹری مرزا حامد نے کہا کہ جب یہ پاور پلانٹس لگے تھے تو اس کی سوورین گرانٹی (sovereign guarantee) حکومتِ پاکستان نے دی تھی یعنی حکومتِ پاکستان نے آئی پی پیز کو یہ کہا کہ جو بھی بجلی آپ بنائیں گے یہ بجلی کی کمپنیاں خریدیں گی اور اس کی ادائیگی کی گارنٹی ہم دیتے ہیں۔

یادرہے کہ چند روز قبل ایک انگریزی اخبار میں بھی عدم ادائیگیوں پر 10آئی پی پیز کی طرف سے بذریعہ اشتہار حکومت کوا ٓگاہ کیاجاچکاہے ۔

مزید :

بزنس -