متوالے کا گھر بسنے سے پہلے اجڑ گیا

متوالے کا گھر بسنے سے پہلے اجڑ گیا
متوالے کا گھر بسنے سے پہلے اجڑ گیا

  

فیصل آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)ناولٹی چوک میں ن لیگ کے کارکن کی گولی لگنے سے ہلاک ہونے والے پی ٹی آئی کے دوسرے کارکن حق نواز کی ایک ماہ بعد شادی تھی اور ماں اس وقت شادی کی خریداری کے لیے پشاور میں ہے ۔

پی ٹی آئی کے رہنماءاعجاز چوہدری نے اصغر علی کی ہلاکت کی مذمت کرتے ہوئے بتایاکہ تحریک انصاف کے دوکارکن شہید ہوئے ہیں ، ہلاک ہونے والے نوجوان حق نواز کی ایک ماہ بعد شادی ہونے جارہی تھی جبکہ نوجوان اپنے لیڈر عمران خا ن کی کال پر پر±امن احتجاج کے لیے ناولٹی چوک پہنچا تھا اور وہ سات سال سے پی ٹی آئی کا کارکن تھا،نوجوان کے گھر خوشیوں کے بجائے ماتم کا سما ں ہے۔

ا±ن کا کہنا ہے تحریک میں اب نوجوانوں کا خوان شامل ہو چکاہے اب یہ تحریک نہیں رکے گی اور نوجوان کے خون کا بدلہ خون سے لیا جائے گا او ر قاتل کو ہر صور ت سز دی جائے گی اور معاف نہیں کیا جائے گا۔

حق نواز کے بھائی نے نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ بھائی کی ایک ماہ بعد شادی تھی اور ماں شادی کی خریداری کے لیے اس وقت پشاور میں ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ حق نواز کرکٹ کا کھلاڑی تھا اور عمران خا ن کا دیوانہ تھااور عمران خان سے محبت کی وجہ سے احتجاج کے لیے ناولٹی چوک میں گیا تھا اور ہمیں حق نواز کی شہادت کا کوئی صدمہ نہیں ہو گا اگر عمران خان ملک کے لیے اچھے کام کریں گے اور اگر عمران خا ن بھی دوسرے حکمرانوں کے جیسی ہی حکمت عملی اپنائیں گے تو ہمیں ضرور دکھ ہو گا کہ ہمارے بھائی کی جان ضائع ہوئی ہے ۔

مزید :

فیصل آباد -