پی ٹی آئی کے جلسہ میں شرکت سے منع کرنے پر نوجوان کی خودکشی

پی ٹی آئی کے جلسہ میں شرکت سے منع کرنے پر نوجوان کی خودکشی
پی ٹی آئی کے جلسہ میں شرکت سے منع کرنے پر نوجوان کی خودکشی

  


وہاڑی (ویب ڈیسک) وہاڑی میں نوجوان نے باپ کی طرف سے فیصل آباد میں پی ٹی آئی کے جلسہ میں شرکت سے منع کرنے پر خود کو گولی مار کر اپنی زندگی ختم کر لی جبکہ چونیاں اور سیالکوٹ میں دو افراد نے جھگڑوں پر دل برداشتہ ہو کر خودکشی کر لی۔ بتایا گیا ہے کہ وہاڑی کے نواحی گاﺅں 192 ای بی کے رہائشی عبدالغفور کا 20 سالہ بیٹا کالج کا سٹوڈنٹ تھا اور گھر میں بہن بھائیوں میں بڑا تھا، ذرائع کے مطابق وہ فیصل آباد میں پی ٹی آئی کے جلسہ میں شریک ہونا چاہتا تھا اور اس سے قبل بھی یہ نوجوان 30 نومبر کو اسلام آباد میں جلسہ میں 3 دن گزار کر آیا تھامگر اب والد نے اسے سمجھایا اور ڈانٹ ڈپٹ کی تو اس نے دلبرداشتہ ہو کر اپنی کنپٹی پر پستول سے فائر کرکے اپنی زندگی کا خاتمہ کر ڈالا۔ پولیس تھانہ صدر نے لاش قبضہ میں لے کر ڈی ایچ کیو پوسٹ مارٹم کے لئے شفٹ کر دی اور کارروائی شروع کر دی۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ نوجوان کے ورثاءاور پولیس واقعہ کو باپ کے ساتھ گھریلو تنازعہ قرار دے رہے ہیں۔ قصور سے بیورو کے مطابق چونیاں انور کالونی کا رہائشی ریٹائرڈ بینک ملازم بشیر احمد ہاشمی کا اکثر گھر والوں سے لڑائی جھگڑا رہتا تھا گزشتہ روز بھی جھگڑا ہوا تو بشیر احمد نے دل برداشتہ ہو کر خود کو گولی مار کر اپنی زندگی کا خاتمہ کر لیا۔ پولیس نے مقدمہ درج کر لیا۔ سیالکوٹ سے بیورو کے مطابق تھانہ مراد پور کے علاقہ پکا گڑھا کے رہائشی 17 سالہ سلمان سرور نے گزشتہ روز گھر والوں کے ساتھ جھگڑے پر دلبرداشتہ ہو کر گندم میں رکھنے والی زہریلی گولیاں نگل کر خودکشی کر لی۔

فیصل آباد احتجاج کی تفصیلا ت جاننے کےلیےوزٹ کریں

مزید : قومی


loading...