پیسے جمع کرنے کے لیے یمنی باغیوں کا سعودی عرب میں انوکھا ترین منصوبہ

پیسے جمع کرنے کے لیے یمنی باغیوں کا سعودی عرب میں انوکھا ترین منصوبہ
پیسے جمع کرنے کے لیے یمنی باغیوں کا سعودی عرب میں انوکھا ترین منصوبہ

  


ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) شدت پسند تنظیمیں عام طور پر منشیات، اغواءبرائے تاوان اور دیگر مجرمانہ طریقوں سے فنڈ اکٹھی کرتی ہیں لیکن سعودی حکام کا کہنا ہے کہ یمنی تنظیم الحوثیون نے اپنے سینکڑوں لوگوں کو بھکاریوں کی شکل میں سعودی عرب بھیج کر فنڈ جمع کرنے کے منصوبہ پر عملدرآمد شروع کر دیا ہے۔

خوشخبری کے بعد بری خبر بھی آگئی، سعودی حکومت نے اقامہ کے اجراءکیلئے شرط رکھ دی

اخبار ”الحیات“ کے مطابق سعودی وزارت داخلہ نے خبردار کیا ہے کہ الحوثیون کے لوگ جنوبی سرحد سے ملک میں غیر قانونی طور پر داخل ہونے کی کوشش کر رہے ہیں تاکہ مملکت کے طول و عرض میں پھیل کر بھیک کے ذریعے فنڈ اکٹھے کریں۔ حال ہی میں سعودی عرب میں بھکاریوں کی تعداد میں نمایاں اضافہ دیکھا گیا ہے جس کے بعد ان کے خلاف کریک ڈاﺅن شروع کر دیا گیا ہے۔ یمن سے تعلق رکھنے والی شدت پسند تنظیم کو سعودی حکام کی طرف سے ”دہشت گرد“ قرار دیا جا چکا ہے۔ اخبارکے مطابق مملکت میں موجود بھکاریوں کی سب سے بڑی تعداد کا تعلق یمن سے ہے جبکہ دوسرے نمبر پر مصری بھکاریوں کی تعداد ہے۔

مزید : بین الاقوامی


loading...