قائد اعظم ٹرافی کا فائنل 10دسمبر کو واپڈا اور حبیب بینک کا مابین کھیلا جائیگا

قائد اعظم ٹرافی کا فائنل 10دسمبر کو واپڈا اور حبیب بینک کا مابین کھیلا جائیگا

  

لاہور(سپورٹس رپورٹر)قائداعظم ٹرافی کافائل 10تا14دسمبرکوواپڈااورحبیب بنک کی ٹیموں کے مابین کراچی میں کھیلاجائے گا۔فائنل میں پہنچنے والی دونوں ٹیموں کی بات کریں تو واپڈا کی ٹیم کو واضح برتری حاصل ہے جسے سلمان بٹ، کامران اکمل، محمد عرفان، جنید خان جیسے تجربہ کار کھلاڑیوں کی آمد نے ناقابل تسخیر بنا دیا اور اگر غیر جانبدارانہ انداز سے دونوں فائنلسٹ ٹیموں کا جائزہ لیا جائے تو واپڈا کو حبیب بینک پر واضح برتری حاصل ہے جو ایک ہی کمبی نیشن اور کپتان کیساتھ اس ٹورنامنٹ میں آگے بڑھتے ہوئے فائنل تک پہنچی ہے جبکہ دوسری طرف حبیب بینک کی ٹیم پہلے راؤنڈ میں صرف دو میچز جیتنے کے بعد چوتھی پوزیشن کیساتھ سپر ایٹ میں آئی اور یہاں بھی ایک میچ میں کامیابی اور دوسرے میچ کی منسوخی نے بینک کی ٹیم کو فائنل میں پہنچا دیا۔اس کے علاوہ پورے ٹورنامنٹ میں جبیب بینک کا کمبی نیشن بھی تبدیل ہوتا رہا ہے اور کپتان بھی۔ فائنل میں بھی ممکن ہے کہ احمد شہزاد دوبارہ حبیب بینک کی کپتانی سنبھال لیں۔فائنل میں پہنچنے والی دونوں ٹیموں کی بات کریں تو واپڈا کی ٹیم کو واضح برتری حاصل ہے جسے سلمان بٹ، کامران اکمل، محمد عرفان، جنید خان جیسے تجربہ کار کھلاڑیوں کی آمد نے ناقابل تسخیر بنا دیا دونوں فائنلسٹ ٹیموں کا جائزہ لیا جائے تو واپڈا کو حبیب بینک پر واضح برتری حاصل ہے جو ایک ہی کمبی نیشن اور کپتان کیساتھ اس ٹورنامنٹ میں آگے بڑھتے ہوئے فائنل تک پہنچی ہے جبکہ دوسری طرف حبیب بینک کی ٹیم پہلے راؤنڈ میں صرف دو میچز جیتنے کے بعد چوتھی پوزیشن کیساتھ سپر ایٹ میں آئی اور یہاں بھی ایک میچ میں کامیابی اور دوسرے میچ کی منسوخی نے بینک کی ٹیم کو فائنل میں پہنچا دیا۔اس کے علاوہ پورے ٹورنامنٹ میں جبیب بینک کا کمبی نیشن بھی تبدیل ہوتا رہا ہے اور کپتان بھی۔ فائنل میں بھی ممکن ہے کہ احمد شہزاد دوبارہ حبیب بینک کی کپتانی سنبھال لیں۔قائد اعظم ٹرافی کے ٹاپ پرفارمرز کی اگر بات کریں تو واپڈا کیلئے پہلا سیزن کھیلنے والے کامران اکمل 13اننگز میں ہزار رنز بنا کر سرفہرست ہیں جبکہ دوسری طرف کے آر ایل کی نمائندگی کرنے والے فاسٹ بالر محمد عباس نے 71وکٹیں لے مسلسل دوسرے سیزن میں ٹاپ کیا ہے اور یہ ایسی پرفارمنس ہے جسے جھٹلایا نہیں جاسکتا مگر پاکستان کرکٹ بورڈ کی سلیکشن کمیٹی مسلسل ایسے کھلاڑیوں کو نظر انداز کررہی ہے جو فرسٹ کلاس کرکٹ میں جان ماررہے ہیں۔ واپڈا کی ٹیم پہلی مرتبہ قائد اعظم ٹرافی کے فائنل میں پہنچی ہے جبکہ حبیب بینک کی ٹیم دو مرتبہ یہ ٹرافی اپنے نام کرچکی ہے۔ماضی کے ریکارڈ کے مطابق حبیب بینک کی ٹیم کو برتری حاصل ہے لیکن زمینی حقائق واپڈا کو ٹاپ کلاس ٹیم ثابت کررہے ہیں کیونکہ 10 میں سے 7 میچز جیتنے والی واپڈا کی ٹیم نے پورے ٹورنامنٹ میں لاجواب کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -