صوبائی حکومت نے تعلیمی میدان میں انقلاب برپا کیا ہے :محمود خان

صوبائی حکومت نے تعلیمی میدان میں انقلاب برپا کیا ہے :محمود خان

  

پشاور( سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخوا کے وزیر کھیل ،ثقافت ، میوزیم اور امور نوجوانان محمود خان نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی حکومت نے صوبے میں بہتر طرز حکمرانی کے تحت تعلیمی شعبہ میں اصلاحات لاتے ہوئے انقلاب برپا کیا ہے اور اس مقصد کیلئے صوبے میں تمام بند سکولوں کو چالو کرنے سمیت اساتذہ کی کمی کو پورا کرنے کیلئے میرٹ اور اہلیت کی بنیاد پر این ٹی ایس کے ذریعے ہزاروں اساتذہ کو بھرتی کیا ہے اور اسی طرح کروڑوں روپے کی لاگت سے تعلیمی اداروں کو فرنیچر اور دیگر سہولیات فراہم کی ہیں تاکہ طلبہ دلجمعی کے ساتھ اپنی تعلیم حاصل کر سکیں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ سابق حکومت نے اپنے کمیشن کے لئے صرف سکولوں کی عمارات کھڑی کیں لیکن ان میں عملہ اور دیگر لوازمات پر کوئی توجہ نہیں دی ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پشاور میں ضلع سوات سے تعلق رکھنے والے عمائدین کے ایک بڑے وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کیا جسکی قیادت وزیر اعلیٰ کے معاون خصوصی برائے لائیو سٹاک اور فشریز محب اللہ خان اور رکن صوبائی اسمبلی عزیز اللہ گران نے کی وفد نے صوبائی وزیر کو اپنے علاقوں کے مسائل کے بارے میں تفصیل سے آگا ہ کیا ۔ صوبائی وزیر نے وفد کو یقین دلایا کہ اس کے تما جائز مسائل و مشکلات کا ازالہ کرنے کیلئے متعلقہ حکام سے رابطہ کیاجائے گا۔ انہوں نے کہا کہ سیاسی مخالفین کو ہماری صوبائی حکومت کے بڑے بڑے منصوبے کیوں نظر نہیں آتے جن میں چکدرہ موٹر وے ، چکدرہ سے کالام تک ایکسپریس وے کی تعمیر اور لنڈاکی سے لیکر با غ ڈھیری تک دریائے سوات کے کنارے سڑک تعمیر کرنے کی فیزبیلٹی سٹڈی کے لئے بجٹ میں پانچ کروڑ روپے مختص کرنے کے منصوبے شامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اربوں روپے کی لاگت سے سیلاب سے بچاؤ کے حفاطتی پشتوں اور ایریگیشن چینل کی تعمیر ہو رہی ہے جس سے کافی آبادیا ں سیلابی نقصانا ت سے محفوظ ہو گئی ہیں۔ اس موقع پر صوبائی وزیر نے وزیر اعلیٰ پرویز خٹک کے گیارہ دسمبر کو ہونے والے دورہ سوات کے لئے گئے انتظامات کا بھی تفصیل سے جائزہ لیا۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -