اللہ والوں کے قصّے... قسط نمبر 59

اللہ والوں کے قصّے... قسط نمبر 59
اللہ والوں کے قصّے... قسط نمبر 59

  

جب لوگوں نے امام احمد بن حنبلؒ سے محبت کا مفہوم پوچھا تو آپ نے فرمایا کہ جب تک بشرحانیؒ حیات ہیں ان سے دریافت کرو۔ پھر سوال کیا گیا کہ زہد کس کو کہتے ہیں؟ آپ نے فرمایا ’’عوام کا زہد تو حرام اشیاء کو ترک کردینا ہے اور خواص کا زہد حلال چیزوں میں زیادتی کا طمع نہ کرنا ہے اور عارفین کے زہد کو خدا کے سوا کوئی نہیں جانتا۔‘‘

پھر سوال کیا گیا ’’کہ جو جاہل قسم کے صوفیاء مسجد میں متوکل بن کر بیٹھ جاتے ہیں ان کے متعلق کیا رائے ہے‘‘ اس پر آپ نے فرمایا ’’ایسے لوگوں کو غنیمت سمجھو کیونکہ علم کی وجہ سے انہوں نے توکل اختیار کیا ہے۔‘‘

جب لوگوں نے عرض کیا کہ یہ تو محض روٹیاں حاصل کرنے کا ایک بہانہ ہے۔ تو آپ نے فرمایا ’’دنیا میں کو ئی جماعت بھی روٹیوں سے بے نیاز نہیں۔‘‘

اللہ والوں کے قصّے... قسط نمبر 58 پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں

***

حضرت احمد بن ابراہیم المطلبؒ فرماتے ہیں ’’ایک مرتبہ حضرت بشرؒ نے مجھ سے فرمایا کہ حضرت معروفؒ کو میرا یہ پیغام پہنچا دینا کہ میں نماز فجر کے بعد آپ کے پاس آؤں گا۔‘‘لیکن آپ عشاء کے وقت بھی تشریف نہ لائے۔ میں دیرتک آپ کا منتظر تھا پھر میں نے دیکھا کہ آپ اپنا مصلے اٹھا کر دریائے دجلہ پر پہنچے اور پانی کے اوپر چل کر صبح تک حضرت معروف سے مصروف گفتگو رہے اور صبح کو پھر پانی پر چلتے ہوئے واپس آگئے۔

اس پر مَیں نے ان کی خدمت میں حاضر ہو کر اور اُن کے قدم پکڑ کر اپنے لئے دعا کی درخواست کی۔

آپ نے دعا دے کر فرمایا ’’جب کچھ تم نے دیکھا ہے اس کو میری حیات میں کسی سے بیان نہ کرتا۔‘‘

***

ایک مرتبہ حضرت ابوبکر عیاشؒ حضرت داؤد طائیؒ کے یہاں پہنچے۔ آپ نے دیکھا کہ حضرت روٹی کا ایک ٹکڑا ہاتھ میں لئے رورہے ہیں اور جب حضرت عیاش نے وجہ پوچھی، تو فرمایا۔’’دل تو چاہتا ہے کہ اسے کھالوں لیکن یہ پتہ نہیں کہ رزق حلال بھی ہے یا نہیں۔‘‘

***

حضرت یحییٰ بن معاذؒ حضرت شاہ سجاع کربانیؒ کے گہرے دوستوں میں سے تھے۔ چنانچہ جب دونوں ایک ہی شہر میں جمع ہوئے تو حضرت یحییٰؒ نے اپنے مجلس وعظ میں آپ کو بھی مدعو کیا لیکن آپ نہیں گئے۔ پھر کچھ دنوں کے بعد جب آپ حضرت یحییٰؒ کے ہاں پہنچے، تو ایک گوشہ میں چھپ کر بیٹھ گئے۔ اس وقت حضرت یحییٰؒ وعظ میں مشغول تھے لیکن اچانک آپ کی زبان بند ہوگئی۔

کچھ وقفے بعد آپ نے فرمایا ’’اس مجلس میں شاید مجھ سے بھی بہتر کوئی واعظ موجود ہے جس کے تصرت نے میری زبان بند کردی ہے۔‘‘

یہ سن کر حضرت شاہ سجاع کربانیؒ سامنے آئے اور فرمایا’’میں اس وجہ سے آپ کی مجلس وعظ میں شریک ہونا نہیں چاہتا تھا۔‘‘(جاری ہے)

اللہ والوں کے قصّے... قسط نمبر 60 پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں

مزید :

کتابیں -اللہ والوں کے قصے -