محکمہ وائلڈ لائف نے سیکڑوں پرندوں کوشکاریوں کے چنگل سے چھڑوالیالیکن اب وہ پرندے کہاں ہیں؟جان کرآپ بھی خوش ہوجائیں گے

محکمہ وائلڈ لائف نے سیکڑوں پرندوں کوشکاریوں کے چنگل سے چھڑوالیالیکن اب وہ ...
محکمہ وائلڈ لائف نے سیکڑوں پرندوں کوشکاریوں کے چنگل سے چھڑوالیالیکن اب وہ پرندے کہاں ہیں؟جان کرآپ بھی خوش ہوجائیں گے

  



کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)محکمہ وائلڈ لائف نے پانچ سوسے زائدقیمتی جنگلی پرندوں کو شکاریوں کے چنگل سے چھڑوالیااور انہیں فضامیںآزاد کردیا چھوڑ دیا۔ایکسپریس ٹربیون کے مطابق سندھ کے محکمہ وائلڈ لائف ڈیپارٹمنٹ کے اعلیٰ عہدیدار نعیم احمد نے بتایا ہے کہ گزشتہ روزز کراچی کے کینٹ اسٹیشن کے قریب خفیہ اطلاع پر کارروائی کرکے پانچ سو سے زائد پرندوں کو بازیاب کیا گیا تھا جنہیں آج فضا میں چھوڑ دیا گیاہے۔

نعیم احمد نے بتایا کہاس کارروائی کے دوران کوئی خاص مزاحمت نہیں کی گئی ،سڑک کنارے پنجروں میں بند پرندوں کو محکمے کے دفتر میں لایاگیا تھا جس کے بعد آج انہیں ہلیجی نہر کے قریب فضا میں اڑادیاگیاہے۔تاہم ایک شخص جس نے ان پرندوں کو اپنی ملکیت بتایا تھا وکلا کے ساتھ آیا اور دباو ڈالنے کی کوشش کی کہ وہ پرندے اسے واپس کئے جائیں تاہم پولیس نے انہیں ایک بھی پرندہ واپس نہیں کیا۔حکام کے مطابق ان پرندوں میں چار مختلف کیٹیگرز کے پرندے شامل تھے جن میں مینا، بنک مینا، رید وینٹڈ بلبل اور وائٹ وینٹڈ بلبل شامل تھیں۔

حکام کے مطابق یہ عمومی پرندے ہیں جو ملک کے طول و عرض میں تمام موسموں میں پائے جاتے ہیں۔انہوں نے کہا جنگلی علاقہ کے قریب اس لئے چھوڑا گیا ہے تاکہ پرندے اپنے گھونسلوں کو پہنچ جائیں اگر شہر میں چھوڑے جاتے تو یہ معصوم پرندے شکاریوں کے ہاتھوں مارے جاتے۔

محکمہ وائلڈ لائف کے مطابق گزشتہ آٹھ ماہ میں ساٹھ ہزار سے زائد پرندوں کوشکنجوں سے بچاکر فضا میں اڑادیاگیاہے۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی


loading...