مائنس عمران کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا،شہباز شریف کے بعد اَب مریم نواز کے ’مائنس‘ ہونے کا وقت آگیا:جہانگیر ترین

مائنس عمران کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا،شہباز شریف کے بعد اَب مریم نواز کے ...
مائنس عمران کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا،شہباز شریف کے بعد اَب مریم نواز کے ’مائنس‘ ہونے کا وقت آگیا:جہانگیر ترین

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)پی ٹی آئی کے مرکزی رہنما جہانگیر خان ترین نے کہا ہے کہ تحریک انصاف ہے ہی عمران خان صاحب کی وجہ سے،مائنس ون کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا اور نہ ہی مائنس عمران خان کا کوئی سوچ سکتا ہے،چودھری برادران سے ملاقات ہوئی ان کے کوئی تحفظات نہیں،شہباز شریف مائنس ہوئےاَب مریم نواز کے مائنس ہونے کا وقت آگیا ہے۔

لاہورمیں میڈیاسےگفتگو کرتےہوئےپاکستان تحریک انصاف کےرہنماجہانگیر ترین کاکہناتھاکہ ن لیگ کےخیالی پلاؤ ہیں،ملک میں سیاسی طورپرکوئی تبدیلی نہیں  آئے گی،وزیراعظم عمران خان ہی رہیں گے،ن لیگ کی تمام کوششیں ناکام جائیں گی،وزیراعظماپنےوعدے پرقائم ہیں اوروہ احتساب کرک احتساب  کرکے رہیں گے۔مریم نواز کی بیرون ملک جانے کی درخواست کے حوالے سے سوال کا جواب دیتے ہوئے جہانگیر خان ترین کا کہنا  تھا کہ جن کے اوپر کیسز ہیں وہ چاہ رہے ہیں کہ بیماری کابہانہ بناکرباہرنکل جائیں،نواز شریف مائنس ہوئے،شہباز شریف مائنس ہوئے،اَب مریم نواز کے مائنس ہونے کا وقت آگیا ہے،نواز شریف کے دو بیٹے اوربہوویں اُن کےپاس ہیں،مجھے نہیں لگتاکہ مریم نواز کواُن کےپاس جانےکی ضرورت ہے،نواز شریف کی تیمار داری کیلئے اُن کے پاس بیٹے موجود ہیں۔اُنہوں نےکہاکہ پیپلز پارٹی اورن لیگ نےمعیشت کا بیڑا غرق کیا،اُن کابویاہواہم کاٹ رہےہیں، معیشت کو سنبھال رہے اور مہنگائی پر بھی قابو پائیں گے۔

چیف الیکشن کمشنرکی تعیناتی اور آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع سے متعلق قانون سازی پر کئے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا ہماری اور اپوزیشن کی آئینی ذمہ داری ہے کہ مل بیٹھیں،پارلیمنٹ سپریم اور قانون سازی کااختیار رکھتی ہے،آرمی ایکٹ کے حوالے سے کورٹ کے تفصیلی فیصلہ آنے کا انتظار ہے۔جہانگیر خان ترین کا کہنا تھا کہمولانا فضل الرحمن کا آنا جانا لگا رہتا ہے، اِن کے آنے جانے سے کوئی فرق نہیں پڑتا،آج  اختر مینگل کے تحفظات سنے ہیں ،مل بیٹھ کے اُن کے تمام تحفظات کو  دور کریں گے جبکہ چودھری برادران سے بھی ملاقات ہوئی ہے،اِن کے کوئی تحفظات نہیں، مائنس عمران خان کا کوئی سوچ بھی نہیں سکتا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

مزید : قومی


loading...