وزیراعلیٰ بلوچستان بے اختیار ہیں تو گوادر دھرنے میں بیٹھ جائیں: سراج الحق 

وزیراعلیٰ بلوچستان بے اختیار ہیں تو گوادر دھرنے میں بیٹھ جائیں: سراج الحق 

  

تربت(آن لائن)جماعت اسلامی پاکستان کے مرکزی امیر سینیٹرسراج الحق نے کہاہے کہ وزیراعلیٰ بلوچستان بے اختیار ہیں تو گوادر دھرنے میں بیٹھ جائیں اور عوام کاساتھ دیں،بلوچستان میں ہر طرف اندھیر نگری اورچھوپٹ راج جبکہ اسٹیلبشمنٹ اوربیوروکریسی نے بلوچستان کونظرانداز کیاہے، بلوچستان معدنیات سے مالامال ہے یہاں کے لوگوں کے پاؤں تلے سونا موجود ہے،قدرتی ذخائرموجود ہیں،بہترین زرعی اراضیات موجود ہیں لیکن بدقسمتی سے یہاں شرع غربت 71فیصد سے زیادہ ہے،بے روزگاری بہت زیادہ ہے پانی کی کمی ہے۔ان خیالات کااظہار انہوں نے تربت سرکٹ ہاؤس میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ جماعت اسلامی پاکستان کے مرکزی امیر سینیٹرسراج الحق ایک روزہ  دورے پر تربت پہنچ گئے۔ انہوں نے سرکٹ ہاؤ س تربت میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہ گوادرکے عوام نے ہزروں کے تعد اد میں اپنے بنیادی حقوق ومسائل کیلئے دھرنا دیاہے،خواتین وبچوں نے بھی حمایت میں ریلی نکالی ہے،کفن پوش ریلی نکالی گئی ہے،مولانا ہدایت الرحمن نے دھرنا سے قبل پرامن طریقے سے مطالبات انتظامیہ وحکومت کو پیش کئے ہیں لیکن انہیں سنا نہیں گیا۔انہوں نے کہ جماعت اسلامی پاکستان گوادرکے عوام کی آواز بنے گی،جماعت اسلامی پاکستان کا اجلاس آج بدھ کو طلب کرلیا ہے،لائحہ عمل بنائیں گے،قومی اسمبلی،سینٹ،سندھ اسمبلی اورخیر پختونخواہ اسمبلی میں گوادرکے عوام کی آواز بنیں گے اگر صوبائی اوروفاقی حکومت نے گوادرمکران کے عوام کے بنیادی مسائل حل نہ کئے تواس احتجاج کو ملک بھر میں پھیلائینگے۔انہوں نے کہاکہ بلوچستان حکومت گوادرکے عوام کے مسائل سنے،انکی آواز بنے،انکو حق دے اگر وزیراعلی کے پاس اختیارنہیں تو گوادرمیں جاکر دھرنامیں بیٹھ کر عوام کا ساتھ دے۔

سراج الحق 

مزید :

صفحہ آخر -