بابری مسجد کی شہادت ہندوستانی نام نہاد جمہورت  کے منہ پر طمانچہ،علماء

       بابری مسجد کی شہادت ہندوستانی نام نہاد جمہورت  کے منہ پر ...

  

لاہور(نمائندہ خصوصی)جمعیت علماء  اسلام پاکستان کے سرپرست اعلیٰ ڈاکٹر محمد اجمل قادری مفتی احمد علی ثانی،راغب نعیمی،جمعیت اہلحدیث کے امیر ڈاکٹر عبدالغفور راشداورمولانا عبدالرب امجد نے کہا ہے کہ اوربابری مسجد کی شہادت ہندوستان کی نام نہاد جمہورت کے منہ پر طمانچہ ہے، ہمیں نہ بھارت کی جانبدار عدالتوں پر اعتبار ہے اور نہ ہی وہاں کے متعصب حکمرانوں اور سیاسی زعماء  پر ہے بابری مسجد کو گرائے 25سال گزر گئے لیکن ہندو بنیا ابھی تک اپنی ہٹ دھرمی پر قائم ہے، ہندو دنیاکی بزدل ترین قوم ہے جو صرف اپنے گھر میں شیر ہے۔انڈیا کی سیکیولر حکومتوں اور اسلام دشمن پر مبنی حکومتوں کا بابری مسجد پر حملے کی گھناؤنی جرم اور بابری مسجد کی شہادت کا واقع ایسا واقع ہے جو ان کے ماتھے پر کلنک کا ٹیکہ بن کر سجے گاآج بھی انہیں چین کی نیند نہیں سونے دیتا۔مذہبی رہنماؤں کا کہنا تھا کہ بابری مسجد کی شہادت کو 25سال بیت گئے اس دوران بابری مسجد کو کبھی مندر،کبھی شمشان گھاٹ میں تبدیل کیا گیا جو قابل مذمت بھی ہے، بھارت جیسے ملک کے خلاف اقلیتوں کے ساتھ غیر امتیازی سلوک کرنے پر کاروائی کی جائے گی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -