کسٹم انٹیلی جنس کا جامع کلاتھ مارکیٹ میں چھاپہ، اسمگلنگ شدہ کپڑا ضبط

  کسٹم انٹیلی جنس کا جامع کلاتھ مارکیٹ میں چھاپہ، اسمگلنگ شدہ کپڑا ضبط

  

     کراچی (اسٹاف رپورٹر) تاجروں کی جانب سے سخت احتجاج بھی کام نہ آیا، کسٹم انٹیلی جنس نے جامع کلاتھ مارکیٹ سے کروڑوں مالیت کے کپڑا ضبط کرلیا۔کراچی کی مشہور جامع کلاتھ مارکیٹ میں کسٹم انٹیلی جنس نے چھاپہ مارا، جس کے دوران انہیں سخت مزاحمت کا سامنا کرنا پڑا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ چھاپہ غیر قانونی اشیا کی موجودگی کی اطلاع پر مارا گیا۔فریسکو چوک پر کسٹم کارروائی کے خلاف تاجر سڑکوں پر نکل آئے۔ مقامی تاجروں کے احتجاج کے باعث فریسکو چوک میدان جنگ بن گیا۔ احتجاج کے دوران فائرنگ اور پتھرا کے نتیجے میں دو افراد زخمی ہوگئے۔ دونوں زخمیوں کو سول اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔کسٹم ذرائع کا کہنا ہے کہ غیر قانونی اشیا کے تین کنٹینرز کو قبضے میں لے لیا گیا ہے۔ پولیس اور کسٹم کی بھاری نفری کی موجودگی میں کارروائی میں اسمگلنگ شدہ تین کنٹینر سے زائد کروڑوں مالیت کا کپڑا منتقل کردیا گیا ہے۔حکام کے مطابق اس دوران مشتعل افراد نے ٹیم اور پولیس پارٹی پر پتھرا کیا، جواب میں پولیس نے مشتعل افراد کو منتشر کرنے کے لئے شیلنگ اور لاٹھی چارج سمیت ہوائی فائرنگ بھی کی۔ایس ایس پی ساتھ کیمطابق کسٹمز حکام تلاشی کے وارنٹ لیکرجامع کلاتھ مارکیٹ پہنچے تھے جس کی دکانداروں نے سخت مزاحمت کی، فائرنگ اور پتھراؤ سے دوافراد زخمی ہوئے جنہیں سول اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔کارروائی کے بعد تاجر اور علاقہ مکین پھر فریسکو چوک پر جمع ہوئے اور کسٹم کے چھاپے کے دوران ہوائی فائرنگ اور سامان ضبط کرنے پر تاجروں نے ایم اے جناح روڈ پر احتجاج کیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -