اغواء اس وقت شروع ہو جاتا ہے جب کسی کو غیر قانونی وہاں سے نکلنے سے روک دیا جائے ،اسلام آباد ہائیکورٹ کے نور مقدم قتل کیس میں ملزموں کی اپیلوں پر ریمارکس

اغواء اس وقت شروع ہو جاتا ہے جب کسی کو غیر قانونی وہاں سے نکلنے سے روک دیا ...
اغواء اس وقت شروع ہو جاتا ہے جب کسی کو غیر قانونی وہاں سے نکلنے سے روک دیا جائے ،اسلام آباد ہائیکورٹ کے نور مقدم قتل کیس میں ملزموں کی اپیلوں پر ریمارکس

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)نور مقدم قتل کیس میں ملزموں کی اپیلوں پر سماعت کے دوران اسلام آباد ہائیکورٹ نے کہاکہ ضروری نہیں کوئی مرضی سے آئے تو وہ اغوا ءنہیں ہو سکتا،اغوا اس وقت شروع ہو جاتا ہے جب کسی کو غیر قانونی وہاں سے نکلنے سے روک دیا جائے ۔

نجی ٹی وی چینل" ہم نیوز" کے مطابق نور مقدم قتل کیس میں ملزموں کی اپیلوں پر سماعت ہوئی ،سزا یافتہ مجرم چوکیدار افتخار کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہاکہ افتخار کی وقوعہ کی جگہ پر موجودگی ثابت ہے لیکن وہ ملازم ہے، افتخار گھریلو ملازم ہے اس کو کچھ بھی معلومات نہیں تھیں۔

عدالت نے استفسار کیا کہ سی سی ٹی وی فوٹیج میں آپ کا کردار آیا ہے؟ وکیل ملزم نے کہاکہ چوکیدار کا کام ہی دروازہ کھولنا اور بند کرنا ہے ، عدالت نے کہاکہ جب نور مقدم نے وہاں سے نکلنے کی کوشش کی تو افتخار نے کیوں روکا؟گھریلو ملازم ہونے کا مطلب یہ نہیں مالک کوئی غیر قانونی کام کہے گا تو وہ کر لے گا۔

وکیل ملزم نے کہاکہ نور مقدم کا اس گھر مستقل آنا جانا تھا،عدالت نے کہاکہ ظاہر جعفر زبردستی نور مقدم کو گھر کے اندر لے گیا افتخار گیٹ پر موجود تھا،بنیادی طور پر ٹرائل کورٹ کی فائنڈنگ ڈی وی آر کی بنیاد پر ہیں۔

وکیل نے کہاکہ چوکیدار 20 ہزار ماہانہ تنخواہ لیتا تھا ،وہ مالک کے دوست کو ٹچ بھی نہیں کر سکتا، عدالت نے کہا کہ ڈی وی آر کے مطابق نور مقدم نے کہا کہ مجھے جانے دو، اس نے نہیں جانے دیا، سی سی ٹی وی کے مطابق اگر نور مقدم جانا چاہ رہی تھی چوکیدار نے روکا تو کیا یہ اغوا ءنہیں ؟ 

اسلام آباد ہائیکورٹ نے اسٹیٹ کونسل کو ڈی وی آر سے متعلق آگاہ کرنے کی ہدایت کردی،عدالت نے اسٹیٹ کونسل کو ہدایت کی کہ ڈی وی آر فراہمی کے لیے آرڈر پاس کردیں گے۔

 وکیل ملزم نے کہاکہ افتخار نے نور مقدم کو روکا نہیں بلکہ گیٹ بند کیا ہے، عدالت نے کہاکہ ضروری نہیں کوئی مرضی سے آئے تو وہ اغوا ءنہیں ہو سکتا،اغوا ءاس وقت شروع ہو جاتا ہے جب کسی کو غیر قانونی وہاں سے نکلنے سے روک دیا جائے ،عدالت نے نور مقدم کیس میں دائر اپیلوں پر سماعت13 دسمبر تک ملتوی کر دی۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -