آپ کی وہ عادت جو کم کھانا کھانے کے باوجود آپ کے وزن میں اضافہ کا باعث بن رہی ہے، فوری چھٹکارا پالیں

آپ کی وہ عادت جو کم کھانا کھانے کے باوجود آپ کے وزن میں اضافہ کا باعث بن رہی ...
آپ کی وہ عادت جو کم کھانا کھانے کے باوجود آپ کے وزن میں اضافہ کا باعث بن رہی ہے، فوری چھٹکارا پالیں

  

لندن(نیوزڈیسک)انسان کے جسم کے اندر اور باہر کروڑوں طرح کے جراثیم پرورش پاتے ہیں۔ہماری انتڑیاں بھی ان سے محفوظ نہیں ہوتیں لیکن ان میں سے کچھ بہت زیادہ مفید ہوتے ہیں اور کچھ کی وجہ سے ہم گیس ،بدہضمی اور وزن بڑھنے جیسے مسائل کا شکار ہوتے ہیں۔

ماہرغذا اور صحت وینیزا ہِل کا کہنا ہے کہ ہمارے پیٹ میں موجود مفید بیکٹیریا کو ’مائیکروبائیوم‘کہاجاتا ہے جو کہ ہمارے کھانے کو بہتر طریقے سے ہضم کرنے میں مدد کے ساتھ مدافعتی نظام کو مضبوط کرتے ہیں۔یہ مائیکروبائیوم ہمارے موڈ ،نینداور ذہنی تناﺅ کو ٹھیک رکھنے میں بھی مددگار ہوتے ہیں ۔جب ہم اچھی نیند نہیں سو پاتے تو جسم میں ’کورٹیسول‘ کی مقدار بڑھ جاتی ہے جس کی وجہ سے ہم ذہنی تناﺅ کا شکار ہونے لگتے ہیں۔اس کا کہنا ہے کہ جیسے جیسے کورٹیسول کی مقدار بڑھتی ہے ویسے ہی مائیکروبائیوم کی مقدار کم ہونے لگتی ہے جس کی وجہ سے ہم ذہنی تناﺅ کا شکار ہوتے ہیں۔جب ہم نیند صحیح طرح نہیں لیتے تو مائیکروبائیوم بھی بری طرح متاثر ہوتے ہیں جس کی وجہ سے میٹابولزم بھی خراب ہونے لگتا ہے اور اس کی رفتار کم ہوجاتی ہے۔یہ منفی تبدیلی ہمارے وزن بڑھنے کی صورت میں ظاہر ہوتی ہے۔جب ہم جنک فوڈ کھاتے ہیں یا غلط وقت پر کھانا کھاتے ہیں تو مائیکروبائیوم کی مقدار کم ہونے لگتی ہے اور ہماری نیند بھی بری طرح متاثر ہوتی ہے جس کی وجہ سے وزن بڑھنے لگتا ہے۔کچھ لوگ بڑھتے وزن کو کم کرنے کے لئے کھانے کی مقدار کم کردیتے ہیں لیکن انہیں یہ علم نہیں ہوتا کہ مائیکروبائیوم کی مقدار کم ہوچکی ہے جس سے ان کی نیند متاثر ہورہی ہے لہذا وزن کم نہیں ہوتا۔اس کا کہنا ہے کہ لوگوں کو چاہیے کہ اس بات کو یقینی بنائیں کہ وہ باقاعدگی کے ساتھ رات کی نیند پوری کریں تاکہ مائیکروبائیوم کی تعداد بڑھے ،اس طرح لوگ اپنا وزن کم کرنے اور موڈ خوشگوار رکھنے میں کامیاب ہوسکتے ہیں۔

مزید : تعلیم و صحت