کاشت کو فروغ دیکرملک کو خوردنی تیل میں خود کفیل بنایا جاسکتا ہے ٗمحکمہ زراعت

کاشت کو فروغ دیکرملک کو خوردنی تیل میں خود کفیل بنایا جاسکتا ہے ٗمحکمہ زراعت

لاہور (این این آئی) محکمہ زراعت پنجاب نے کہا ہے کہ سورج مکھی کی کاشت کو فروغ اور فی ایکڑ پیداوار میں اضافے کے ذریعے ملک کو خوردنی تیل میں خود کفیل بنایا جاسکتا ہے ۔ ترجمان کے مطابق بھاری میرا زمین سورج مکھی کی کاشت کیلئے موزوں ہے ۔ زمین کی تیاری کیلئے راجہ ہل یا ڈسک ہل پوری گہرائی تک چلائیں تاکہ پودوں کی جڑیں گہرائی تک جاسکیں اور کھیت کو ہموار کرنے کیلئے لیزر استعمال کریں ٗشرح بیج کا تعین زمین کی قسم ، شرح بیج کی روئیدگی، وقت کاشت اور طریقہ کاشت کو مدنظر رکھ کر کریں ۔ ہائبرڈ اقسام کا90 فیصد سے زیادہ اُگاؤ والا دو تا اڑھائی کلو گرام صاف ستھرا بیج فی ایکڑ استعمال کریں اور بوائی کے وقت بیج کی گہرائی زیادہ سے زیادہ دو انچ رکھیں۔ قطاروں کا درمیانی فاصلہ سوا دو تا اڑھائی فٹ رکھیں، آبپاش علاقوں میں پودوں کا درمیانی فاصلہ 9 انچ اور بارانی علاقوں میں12 انچ رکھیں ۔ انہوں نے بتایاکہ رواں سال صوبہ پنجاب میں سورج مکھی کی کاشت کا ہدف 86 ہزار 5 سو ایکڑ مقرر کیا گیا ہے جس سے تقریباً 60 ہزارٹن پیداوار حاصل ہوگی۔

پاکستان اپنی ملکی ضروریات کا صرف 30 فیصد خوردنی تیل پیدا کرتا ہے جبکہ باقی 70 فیصد درآمد کرنا پڑتا ہے جس پر کثیر زرمبادلہ خرچ ہوتا ہے۔

مزید : کامرس