پی آئی اے کا معاملہ خوش اسلوبی سے حل ہونا چاہیے،حافظ طاہر محمود اشرفی

پی آئی اے کا معاملہ خوش اسلوبی سے حل ہونا چاہیے،حافظ طاہر محمود اشرفی

لاہور(خبر نگار خصوصی)پاکستان علماء کونسل انتہاء پسندی ، دہشت گردی ، فرقہ وارانہ تشدد کے خاتمے ، بچیوں کی تعلیم ،جہیز اور عالم اسلام اور پاکستان کے موجود ہ حالات کے تناظر میں 10 فروری کو اسلام آباد کنونشن سنٹر میں پیغام اسلام کانفرنس منعقد کر رہی ہے ۔ کانفرنس میں ملک بھر سے پانچ ہزار سے زائد علماء و مشائخ مدرسین ، آئمہ اور خطباء شریک ہوں گے ۔ کانفرنس میں مفتی اعظم فلسطین مہمان خصوصی ہوں گے جبکہ مکہ مکرمہ سے مولانا عبد الحفیظ المکی ، مولانا سعید احمد عنایت اللہ ، الدکتور عامر، برطانیہ سے تبلیغی جماعت کے رہنما حاجی محمد بوستان بھی شریک ہوں گے۔ یہ بات پاکستان علماء کونسل کے مرکزی چیئرمین حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے اسلام آباد نیشنل پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی ۔ اس موقع پر ان کے ہمراہ صاحبزادہ زاہد محمود قاسمی ، مولانا عبد الحمید صابری ، مولانا نعمان حاشر ، مولانا طاہر عقیل ، مولانا شہباز عالم فاروقی ، مولانا حفیظ الرحمن بھی موجود تھے۔ پاکستان علماء کونسل کا یہ اعزاز ہے کہ 1938ء کے بعد مفتی اعظم فلسطین پاکستان علماء کونسل کی دعوت پر اس خطے میں تشریف لا رہے ہیں۔ کانفرنس میں سعودی عرب ، بوسینیا ، مصر ، ترکی ، ایران ، قطر اور دیگر اسلامی ممالک سے مسلم مفکرین اور قائدین شریک ہوں گے۔ انہوں نے ملک کے موجودہ حالات پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ پی آئی اے کے مسئلہ سمیت تمام قومی مسائل کے حل کیلئے تمام سیاسی و مذہبی قائدین کو ملکی اور قومی مفاد کو مد نظر رکھنا چاہیے۔ پی آئی اے کا معاملہ خوش اسلوبی سے حل ہونا چاہیے ۔ انہوں نے گذشتہ روز کوئٹہ میں ہونے والے بم دھماکے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے اندر آپریشن ضرب عضب کے بعد پیدا ہونے والا امن بعض قوتوں کو پسند نہیں ہے اور وہی قوتیں اب پاکستان میں تخریب کرنے کی کوشش کر رہی ہیں ۔

مزید : علاقائی