قبل از وقت پیدائش ،آئی پیڈ سے بھی کم وزن نوزائیدہ بچہ معجزانہ طور پر زندگی کی راہ پر گامزن ،اعزاز احاصل کرنے کے امکانات روشن

قبل از وقت پیدائش ،آئی پیڈ سے بھی کم وزن نوزائیدہ بچہ معجزانہ طور پر زندگی کی ...
قبل از وقت پیدائش ،آئی پیڈ سے بھی کم وزن نوزائیدہ بچہ معجزانہ طور پر زندگی کی راہ پر گامزن ،اعزاز احاصل کرنے کے امکانات روشن

  

دبئی ( مانیٹرنگ ڈیسک) دوران حمل مقررہ وقت سے پہلے پیدا ہونیوالے بچوں میں زندہ بچنے کے امکانات کم پائے جاتے ہیں تاہم دبئی میں پیدائش کے عمومی وقت سے 14ہفتے قبل پیدا ہونیوالانوزائیدہ بچہ جس کا وزن پیدائش کے وقت ایک آئی پیڈ سے بھی کم تھا معجزانہ طور پر دبئی کی تاریخ میں وقت سے قبل پیدا ہونے والے بچوں میں زندہ بچ جانے والے بچے کا ریکارڈ اپنے نام کرنے کو ہے۔

ایمریٹس 24/7کے مطابق نکولیس کا شمار ’micro preemie‘ میں ہوتا ہے ایسے بچے جو قبل از وقت پیدا ہوتے ہیں اور ان کا وزن 900گرام سے بھی کم ہوتا ہے انہیں’ micro preemie‘کلاس میں رکھا جاتا ہے ۔ نکولیس کی ماں سوزی 23ہفتوں کی حاملہ تھی جب اس نے زلیخہ ہسپتال میں 530گرام وزن کے بچے نکولیس کو جنم دیا ۔

نکولیس کے والدین کا کہنا ہے کہ انہیں 4ماہ تک ہسپتال میں رہنا پڑا جہاں نکولیس کو انتہائی نگہداشت میں رکھا گیا اور ڈاکٹروں کی انتھک کوششوں کا نتیجہ ہے کہ نکولیس معجزانہ طور پر زندگی کی راہ پر گامزن رہا اوراس کی صحت بتدریج بہتر ہوتی رہی اور بالآخر انہیں 110دن کے بعد ہسپتال سے چھٹی مل گئی اس وقت نکولیس کا وزن 1اعشاریہ 9 کلو گرام ہو چکا تھا۔

ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ ایک وقت ایسا بھی تھا کہ اس بات کا امکان بہت کم تھا کہ نکولیس زندہ بھی رہ پائے گا کیونکہ اس کی پیدائش اس قدر قبل از وقت تھی اور اس کی جلد اس قدر نازک تھی کہ چھونے سے بھی اس کو نقصان پہنچ سکتا تھا۔ نکولیس کو انتہائی نگہداشت یونٹ میں رکھا گیا جہاں اسے پھیپھڑوں کو خصوصی ادویات دی گئیں، درجہ حرارت برقرار رکھنے کیلئے خصوصی آلات و مشینری استعمال کی گئی اور اس کی دیکھ بھال کیلئے ہر ممکن اقدامات بروئے کار لائے گئے ۔ ناپختہ جسمانی اعضاء جن میں پھیپھڑے ، دماغ ، انتہائی نازک ہڈیاں اور اس قدر نازک جلد کے چھونے سے بھی اس کو نقصان پہنچ جائے ان سب کے باوجود نکولیس کا بچ جانا کسی معجزے سے کم نہیں ہے۔

بچے کے والدین کی جانب سے ڈاکٹروں اور میڈیکل ٹیم کا شکریہ ادا کیا گیا ہے جن کی انتھک کاوشوں سے ان کا نوزائیدہ بچہ صحت مند ہو رہا ہے اور اس بات کا قوی امکان موجود ہے  کہ نکولیس متحدہ عرب امارات میں پیدا ہونے والے سب سے قبل از وقت پیدائش کے بعد زندہ بچ جانے والے بچے کا اعزاز اپنے نام کر لے گا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس