گزشتہ روز غلاف کعبہ کو آگ لگانے کی کوشش سے پہلے ملزم کفریہ نعرے لگا تا سنا گیا : سعودی میڈیا

گزشتہ روز غلاف کعبہ کو آگ لگانے کی کوشش سے پہلے ملزم کفریہ نعرے لگا تا سنا گیا ...
گزشتہ روز غلاف کعبہ کو آگ لگانے کی کوشش سے پہلے ملزم کفریہ نعرے لگا تا سنا گیا : سعودی میڈیا

  


مکہ مکرمہ(ڈیلی پاکستان آن لائن )گزشتہ روز مکہ مکرمہ میں غلاف کعبہ کو آگ لگانے کی کوشش کرنے والے ذہنی طور پر مفلوج شخص کے بارے میں انکشاف ہوا ہے کہ وہ ایسا کرنے سے پہلے کفریہ نعرے اور سعودی حکومت کے خلاف کلمات بھی بلند کر رہا تھا تاہم سعودی حکام نے ان افواہوں کی تردید کی ہے کہ ملزم غلاف کعبہ کو نقصان پہنچانا چاہتا تھا۔”اس ملزم نے صرف خود کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی “۔

سعودی گزٹ کے مطابق سبق نیوز ویب سائٹ نے واقعے کے عینی شاہدین کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ40سالہ سعودی شخص گزشتہ روز غلاف کعبہ کو آگ لگانے سے قبل کفریہ کلمات کہتا سنا گیا اور یہ وہ نعرے تھے جو جو دنیا بھر میں حملے کرنے والے شدت پسند گروپ کی طرف اشعارہ کررہے تھے۔ان نعروں کو سن کر لوگوں کی توجہ اس کی طرف مبذول ہو رہی تھی۔

شادی کے سیزن میں اس چیز سے بال دھونے سے ان میں ایسی چمک آئے گی کہ سب آپ کی تعریف کرنے پر مجبور ہوجائیں گے

ایک عینی شاہد نے یہ بھی کہا ہے کہ ملزم کے ہاتھ میں پٹرول کی ایک بوتل تھی جسے اس نے غلاف کعبہ پر چھڑکا۔اس دوران وہ زبان سے برے کلمات بھی نکال رہا تھا اور سعودی حکومت کے خلاف ہذیان گوئی بھی کررہا تھا۔اس جنونی شخص نے سوموار کی رات 11 بجے مکہ مکرمہ میں طواف کے دوران بیت اللہ کے غلاف کو پٹرول چھڑ کر آگ لگانے کی مذموم کوشش کی جسے طواف کرنے والے زائرین اور مقامی پولیس نے بروقت کاروائی کرتے ہوئے گرفتار کر لیا ۔

TapMad نے ہمہ وقت سرگرم رہنے والوں کے لئے انٹرٹینمنٹ کی نئی دنیا متعارف کروادی

پولیس کے مطابق ملزم سے پوچھ کچھ جاری ہے۔ابتدائی تحقیقات کے مطابق ملزم کو ذہنی مریض بتایا جارہا ہے تاہم اس بات کا بھی شبہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ ملزم نے یہ ناپاک جسارت کسی منصوبے کے تحت کی ہو۔

سوشل میڈیا پر غلاف کعبہ کو آگ لگانے کی ویڈیو وائرل ہوگئی ہے۔دنیا بھر کے مسلمان اس ناپاک منصوبے کی مذمت کررہے ہیں اور بیت اللہ کی حفاظت کے لیے نیک جذبات کا اظہار کررہے ہیں۔

مزید : عرب دنیا


loading...