’یہ لو سب پہنو‘ برطانوی دفتر خارجہ میں خواتین میں ایسی اسلامی چیز بانٹ دی گئی کہ ملک میں ہنگامہ برپاہوگیا

’یہ لو سب پہنو‘ برطانوی دفتر خارجہ میں خواتین میں ایسی اسلامی چیز بانٹ دی ...
’یہ لو سب پہنو‘ برطانوی دفتر خارجہ میں خواتین میں ایسی اسلامی چیز بانٹ دی گئی کہ ملک میں ہنگامہ برپاہوگیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) مغربی دنیا میں مسلمانوں سے منافرت پہلے ہی عروج پر ہے، ایسے میں گزشتہ روز برطانوی دفتر خارجہ میں خواتین میں ایسی اسلامی چیز بانٹ دی گئی کہ پورے ملک میں ہنگامہ برپا ہو گیا۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق گزشتہ روز ’عالمی حجاب ڈے‘منایا گیاتھا۔ اس موقع پر برطانوی دفترخارجہ میں بھی خواتین میں سکارف بانٹے گئے اور ان خواتین نے وہ سکارف پہن کر یہ دن منایا۔ لیکن جیسے ہی یہ خبر سامنے آئی برطانیہ بھر میں شوربرپا ہو گیا اور لوگوں نے دفتر خارجہ پر شدید تنقید شروع کر دی کہ وہ ان کے ٹیکس کے پیسے سے ہیڈسکارف خرید کر اسے فروغ دے رہا ہے۔

دفترخارجہ کے اس اقدام پر خواتین کے حقوق کی تنظیمیں بھی میدان میں آ گئیں۔ ایسی ہی ایک تنظیم کے کارکن ماجد نواز کا کہنا تھا کہ ”ایک طرف ایران اور دیگر ایسے قدامت پرست ممالک کی خواتین حجاب کی پابندی کے خلاف لڑ رہی ہیں اور سروں سے حجاب اتار کر ان کے جھنڈے لہرا رہی ہیں۔ ایسے میں برطانوی دفتر خارجہ حجاب اور خواتین پر جبر کی پروموشن کررہا ہے۔“ مسیح علی نژاد نامی ایرانی کارکن کا کہنا تھا کہ ”ایک طرف ہم خواتین پر جبر کے خلاف لڑ رہے ہیں اور دوسری طرف برطانوی دفترخارجہ حجاب کی ترویج کر رہا ہے جو خواتین پر جبر کی سب سے بڑی علامت ہے۔“

مزید : برطانیہ