بونیر ،جملہ مشران کا نوجوانوں کیخلاف کارروائی کرنے کیخلاف مظاہرہ

بونیر ،جملہ مشران کا نوجوانوں کیخلاف کارروائی کرنے کیخلاف مظاہرہ

  

بونیر (ڈسٹرکٹ رپورٹر)جملہ مشران نے پولیس کی جانب سے سادہ کپڑوں میں منشیات کے استعمال کے نام پر جوانوں کا کھیتوں میں پیچھا کرنے ،ہاتھاپائی کرنے کے بعد گرفتار کرکے خوالات میں بندکرکے مقدمات درج کرنے کے خلاف پرامن احتجاجی مظاہر ہ کیاہے۔مظاہرین نے ہاتھوں میں کتبے اٹھارکھے تھے ۔جن پر نامنظور نامنظور سادہ کپڑوں میں پولیس کے چھاپے نامنظور کے نعرے درج تھے ۔احتجاج میں علاقہ کے مشران سید معمبر باچا ۔نصیب خان ۔جہانزیب خان ۔حکیم بھادر ۔جاوید خان ۔بحت بلند خان اور نائب ناظم اشتر خان سمیت کئی شحصیات شریک ہو ئے ۔علاقہ کے درجنوں عوام اور نوجوانوں نے بھی شرکت کی ہے۔احتجاج سے جاوید خان ۔حکیم بھادر نے علاقہ مشران کے سامنے واقعہ کی صورت حال واضح کرتے ہوئے کہاہے کہ ناوہ گئی پولیس کے سادہ کپڑوں میں ملبوس اہلکاران شہاب اور انور نے گھر کے پاس زمینوں پرکام کرنے والے نوجوانوں کا پیچھاکیا اور انہیں زدوکوب کیااور باوردی پولیس موبائل کو بلاکر تینوں نوجوانوں عمران بھادر ۔نعیم بھادر اور بھارعلی کو پولیس سٹیشن منتقل کیا جہاں ان کو تشدد کا نشانہ بنایا اور انکے خلاف مقدمات درج کیا ۔جبکہ گھر پر موجود ملک بھادر کو بھی مقدمہ میں ملوث کیا ۔علاقہ مشران نے واقعہ کی مذمت کی اور پرامن شہریوں پر پولیس گردی کی مذمت کی ،عوامی ورکرز پارٹی کے جہانزیب ،نائب ناظم اشتر خان نے اپنے خطاب میں کہاہے کہ کھیتوں میں کام کرنے والے نوجوانوں کے خلاف سادہ کپڑوں میں ملبوس اہلکاروں کی تعقب ،حجروں پربغیر سرچ وارنٹ داخل ہو نا اور گھروں میں بغیر لیڈی پولیس کے داخلہ کی کسی صورت اجازت نہیں دیں گے اور پولیس کو ملک کے قوانین کے مطابق اختیارات استعمال کرنے چاہئے بصورت دیگر متاثرہ فریقین کے ساتھ پولیس گردی کے خلاف علاقہ مشران بھی سڑکوں پر اھتجاج میں شریک ہوں گے ۔ادھر ایس ڈی پی او نعیم خان ،ایس ایچ او افسان خان نے میڈیا کو بتایاہے کہ چھاپہ مخبر کی اطلاع پر مارا گیاتھا ۔لیکن تینوں ملزمان نے پولیس کاراستہ روک کرہاتھا پائی کی اور اصل ملزم ملک بھادر کو موقع سے فرار کرایا جس نے گھر پہنچ کر پولیس پر فائیرنگ کی ہے ۔اور ملزمان کے ہاتھوں سپاہی شہاب کو زخم بھی ائے ہیں ۔انہوں نے پولیس کا موقف بیان کرتے ہوئے کہاکہ سادہ کپڑوں میں ملبوس اہلکاران پولیس مشن کا حصہ ہے۔اور ڈی پی او شاہد احمد خان کے احکامات کے مطابق جرائم پیشہ افرادکے خلاف گھیرا تنگ کیاگیاہے اور منشیات فروشو ں کے لئے صفر برداشت کی پاالیسی ہے۔ڈی پی او شاہد احمد خان نے فون پر میڈیا سے گفتگوں کرتے ہوئے کہاہے کہ علاقہ کو جرائم سے پاک کرنے اور خاص کرمنشیات کے لعنت کو ختم کرنے کے لئے اقدامات اٹھائے جارہے ہیں اور علاقہ مشران اور میڈیا کے نمائندہ گان سے اپیل کی ہے کہ وہ علاقہ کی امن اور نئے نسل کی مستقبل کی خاطر پولیس کا ساتھ دے ۔متاثرہ فریق خاندان کے سربراہ علی صفدر باچانے ڈسٹرکٹ کورٹ سے فون پر میڈیاکو بتایاہے کہ عدالت نے تینوں زیر خراست ملزمان کو ضمانت پر رہا کردئے ہیں اور تاحال عدم گرفتار ملک بھادر کا ضمانت قبل از گرفتاری بھی منظور کیاگیاہے۔جبکہ ایس ایچ او افسان خان اور کانسٹیبلان شہاب اور انور کے خلاف عدالت سیشن کورٹ میں 22/A کے تحت درخواست جمع کراکر تینوں کو ملزمان نامزد کرکے بر خلاف ایف ائی ار درج کرنے کی استدعا کی گئی ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -