پولیس فورس کی جدید خطوط پر تربیت وقت کا تقاضاہے،محمد علی خان

پولیس فورس کی جدید خطوط پر تربیت وقت کا تقاضاہے،محمد علی خان

  

مردان (بیورورپورٹ) ڈی آئی جی مردان ریجن محمد علی خان نے کہاہے کہ پولیس فورس کی جدید خطوط پر تربیت وقت کا تقاضاہے جس کے لئے تمام وسائل کو بروئے کا رلایاجارہاہے،دوران ڈیوٹی شہریوں سے مثبت اوربہتر رویہ ہی فرض شناس پولیس اہلکار کی پہنچان ہے وہ مردان میں پولیس سکول آف پبلک ڈس آرڈر اینڈ رائٹ مینجمنٹ میں'' کیرئیر مینجمنٹ اینڈ پولیس بیہیویر '' کے موضوع پر ایک روزہ ورکشاپ سے خطاب کررہے تھے ورکشاپ میں چاروں اضلاع کے پولیس تھانہ جات کے ایس ایچ او ز،انسپکٹر ز،محررز،ایلٹ فورس،سپیشل برانچ اورٹریفک پولیس آفسیران نے شرکت کی اس موقع پر ڈی پی او سجادخان،ایس پی اپریشن مشتاق خان،شارپ کی کنٹری ڈائریکٹر میمونہ خان،پروفیسر ڈاکٹر عبدالقادر بلوچ نے بھی خطاب کیا ڈی آئی جی نے کہاکہ پولیس فورس جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کیاجارہاہے شہریوں کے ساتھ خوش اخلاقی سے پیش آنا اورمظلوم کی فوری داد رسی کرنے کے لئے تمام تر اقدامات کئے جارہاہے ہیں انہوں نے کہاکہ پولیس اہلکاروں کی پیشہ وروانہ استعداد کار بڑھانے کے لئے مختلف نوعیت کے سکولز قائم کئے گئے ہیں جہاں انہیں جدید خطوط پر تربیت دی جارہی ہے انہوں نے توقع ظاہر کی کہ ورکشاپ میں سیکھنے والے معلومات کو اہلکار ڈیوٹی کے دوران بروئے کار لائیں گے۔ڈی آئی جی مردان نے مزید کہا کہ پولیس کے نئے اصلا حات کے نتیجے میں پولیس کے نظام تربیت کے حوالے سے اہم اقدامات اُٹھائے گئے ہیں خیبر پختونخوا پولیس میں سی ٹی ڈی، ایلیٹ فورس، آر آر ایف اور دیگر شعبے قائم کئے گئے ہیں جس کی بدولت اہلکاروں کے پیشہ ورانہ استعدارکار میں اضافہ ہوا ہے دنیا بھرمیں خیبر پختونخوا پولیس کو ان کی خدمات اور قربانیوں کی بدولت بڑی پزیرائی ملی ہیں پولیس نے دہشت گردی کا بڑی جوانمردی اور بہادری سے مقابلہ کیا ہے انہوں نے کہا کہ عوام کو پولیس سے بڑی توقعات وابستہ ہیں جس پر پورا اترنے کیلئے انہیں اپنی تمام تر صلاحیتوں کو بروئے کار لانا ہوگا۔ اس موقع پر انہوں نے ورکشاپ کے شرکاء میں اسناد تقسیم کئے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -