ڈی ایچ اے میں دودھ کی نہریں بہانے کا وعدہ کہاں گیا، میاں محمد نواز

ڈی ایچ اے میں دودھ کی نہریں بہانے کا وعدہ کہاں گیا، میاں محمد نواز

  

لاہور(ڈویلپمنٹ سیل)ایگزیکٹو گروپ ڈی ایچ اے کے سربراہ اسٹیٹ لینڈ کے چیف ایگزیکٹو میاں محمد نواز نے وفاقی حکومت کی طرف سے ایف بی آرکی قیمتوں میں اضافے کو مسترد کرتے ہوئے سب سے زیادہ ریونیو دینے والے شعبے کی دشمنی قرار دیا ہے ،میاں نواز نے زمین ڈاٹ کام کے بائیکاٹ کا خیر مقدم کرتے ہوئے نو منتخب صدر ابو بکر بھٹی سے سوال کیا ہے کہ آپ سابق صدر میجر رفیق حسرت کے3سالہ دور کو کام کی بجائے سلفیاں کا دور قرار دیتے آئے ہیں میجر رفیق حسرت نے3سال میں جتنی سلفیاں بنائیں آپ نے 3ماہ میں بنا ڈالی ہیں،میاں نواز نے جواب مانگا ہے آپ برادری کو بتائیں کہ آپ کی وزیر خزانہ اور وزیر مملکت اور گورنر سے ملاقات میں کیا معاہدہ ہوا تھا ،آپ کی ملاقات کے اگلے دن ٹیکسز کئی گنا بڑھا دئیے گئے ہیں،میاں نواز نے کہا کہ اپنی نا اہلی کو گزشتہ ٹیم پر ڈالنا آسان ہے آپ کو بھر پور موقع دے رہے ہیں کام کر کے دکھائیں ،ڈی ایچ اے اگر ملاقات کا وقت نہیں دے رہا تو خود سوچیں گزشتہ3سال میں ایسوسی ایشن کے کتنے پروگرامات میں ایڈ منسٹریٹرڈی ایچ اے خود تشریف لائے ،میاں نواز نے 3ماہ گزرنے کے باوجود ٹیم مکمل نہ ہونے پر بھی اظہار تشویش کیا ہے اور ساتھ ہی دیگر کامیاب عہدیداروں سے مشاورت کے بغیر کمیٹیوں کی تشکیل پر حیرت کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ ابو بکر بھٹی انتخابی مہم کے نعروں پر بھی توجہ دیں،آئین میں تبدیلی کا وعدہ مدت تین سال سے دو سال کرنے کا وعدہ ،صدر کو جوابدہ بنانے کا وعدہ،ڈی ایچ اے میں دودھ کی نہریں بہانے کا وعدہ کہاں گیا،میاں نواز نے نئی ٹیم سے درخواست کی ہے کہ آپ کو اللہ نے موقع دیا ہے مینڈیٹ کا احترام کریں اور کام کر کے دکھائیں3ماہ میں آنیاں جانیاں ہی دیکھ رہے ہیں۔

میاں محمد نواز

مزید :

صفحہ آخر -