علیم خان کو چیئر مین نیب سے ناراضگی پر گرفتار کرنے کا تاثر بے بنیاد ،ترجمان

علیم خان کو چیئر مین نیب سے ناراضگی پر گرفتار کرنے کا تاثر بے بنیاد ،ترجمان

  

اسلام آباد (خصوصی رپورٹ)ترجمان قومی احتساب بیورونے میڈیا میں دیئے گئے اس تاثر کو بے بنیاد، من گھڑت اور یکسر مسترد کرتے ہوئے کہا ہے علیم خان کو چیئر مین نیب سے کسی ناراضگی کی وجہ سے گرفتار نہیں کیا گیا ،انکی گرفتاری بادی النظر میں قانون کے مطابق میرٹ ،شواہد اور انصاف کے تمام تقاضوں کو مد نظر رکھتے ہوئے کی گئی ہے ،علیم خان کو گررفتاری کے بعد احتساب عدالت میں پیش کیا گیا جہاں احتساب عدالت نے نیب اور علیم خان کے وکلاء کے دلائل سننے کے بعد ریمانڈ دیا۔چیئر مین نیب نے اپنی معیاری زندگی قانون کے مطابق گزاری ہے انہوں نے اپنی ذمہ داریاں سنبھالنے کے بعد ملک بھر سے بد عنوانی کے خاتمے کیلئے قانون کے مطابق میرٹ،شفافیت اور ٹھوس شواہد کی بنیاد پر بد عنوان عناصر کو انصاف کے کٹہرے میں کھڑاکرنے کیلئے کوشاں ہیں۔چیئر مین نیب کبھی انکوائری،انویسٹی کیشن پر اثر انداز ہوتے ہیں نہ ہی کسی دوسرے کو نیب کی تحقیقات پر اثر انداز ہونے کی اجازت دیتے ہیں۔چیئر مین نیب نے زندگی میں کبھی علیم خان سے ملاقات کی اور نہ وہ کسی خط کی وجہ سے ان سے ناراض ہیں ۔ نیب اس تاثر کو سختی سے مسترد کرتا ہے اور امید کرتا ہے علیم خان اپنے اوپر لگے الزامات کے جوابات دینے پر اپنی توانائیاں خرچ کرینگے ،چیئر مین نیب کسی سے انتقامی کارروائی پر یقین نہیں رکھتے ہیں،نیب صرف اور صرف آئین اور قانون کے مطابق اپنے فرائض سر انجام دینے پر یقین رکھتاہے ۔

نیب ترجمان

مزید :

صفحہ اول -