پنجاب پولیس کا ایک اور ’کارنامہ‘ سامنے آگیا،ملزم پر تشدد، گاڑی سے اتار کر گھسیٹتے رہے

پنجاب پولیس کا ایک اور ’کارنامہ‘ سامنے آگیا،ملزم پر تشدد، گاڑی سے اتار کر ...
پنجاب پولیس کا ایک اور ’کارنامہ‘ سامنے آگیا،ملزم پر تشدد، گاڑی سے اتار کر گھسیٹتے رہے

  

راجن پور (ویب ڈیسک) راجن پور میں پولیس کا ملزم پر غیر انسانی تشدد، پولیس موبائل سے اتار کر گھسیٹتے رہے۔ ڈی پی او راجن پور نے دونوں پولیس اہلکاروں کو معطل کر دیا۔ پولیس کے مطابق ملزم منشیات فروش اور گرفتاری کے وقت شراب کے نشے میں‌ دھت تھا.

دنیا نیوز کے مطابق راجن پور کے تھانہ کوٹ مٹھن پولیس اہلکار درندے بن کر انسانیت کی تذلیل کرتے رہے، رضوان نامی ملزم کو شدید تشدد کا نشانہ بنا ڈالا، جانوروں کی طرح گھسیٹ کر پولیس وین میں ڈالا اور گھسیٹتے ہوئے پولیس وین سے باہر نکالا۔

ڈی پی او راجن پور کے مطابق رضوان ایک منشیات فروش ہے جس پر پہلے ہی گیارہ ایف آر درج ہیں، اب بھی جب اسے گرفتار کیا شراب میں دھت تھا جس سے منشیات بھی برآمد ہوئی ہے تاہم پولیس اہلکار مزمل اور سجاول کو ملزم سے ناروا سلوک اور تشدد کرنے پر فوری معطل کر دیا گیا ہے اور واقعہ کی انکوائری کا حکم بھی دیدیا۔

مزید :

جرم و انصاف -