سعودی ولی عہد ایک بار پھر بڑی مصیبت میں پھنس گئے

سعودی ولی عہد ایک بار پھر بڑی مصیبت میں پھنس گئے
سعودی ولی عہد ایک بار پھر بڑی مصیبت میں پھنس گئے

  

نیویارک(ویب ڈیسک) سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے بارے امریکی اخبار نے اہم دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے جمال خشوگی کے قتل سے ایک سال قبل صحافی کوگولیاں مارنے کی دھمکی دی، جمال خشوگی کو سعودی حکام نے منصوبہ بندی کے تحت قتل کیا۔

24نیوز کے مطابق اقوام متحدہ کی رپورٹ میں انکشاف ظاہر کیا گیا کہ سعودی صحافی جمال خشوگی کو سعودی حکام نے منصوبہ بندی کے تحت قتل کیا گیا، قتل کے ایک سال قبل سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے صحافی جمال خشوگی کو گولیاں مارنے کی دھمکی دی تھی، جمال خشوگی کے قتل کی تحقیقات کے لیے ترکی جانے والے تین رکنی انکوائری کمیشن نے قتل کیس سے متعلق آڈیو ثبوت کا جائزہ لیا.

مشن میں شامل نمائندہ خصوصی اقوام متحدہ اگینز کلیمرڈ نے کہا ہے کہ سعودی اہلکاروں نے جمال خشوگی کو پہلے سے طے شدہ منصوبے کے تحت وحشیانہ انداز میں قتل کیا۔ اگنیز کا مزید کہنا تھاکہ استنبول میں دوران تفتیش جمع کیے گئے شواہد سے بادی النظر میں یہ پیشہ ورانہ بد اعمالی کا کیس ہے جبکہ سعودی عرب نے ترکی کی تحقیقات میں رخنے بھی ڈالے تاہم تقریباً 4 ماہ بعد بھی جمال خشوگی کی لاش نہیں مل سکی،ماورائے عدالت قتل کی تفتیش کے ماہر اگینز کا مزید کہنا تھاکہ جمال خشوگی کا سفاکانہ قتل ان کے پیاروں کے لیے ناقابل یقین صدمہ ہے جس کے عالمی سطح پراثرات مرتب ہوئے ہیں۔

انہوں نے اقوام متحدہ سمیت عالمی برادری سے معاملے پر فوری توجہ دینے کا مطالبہ بھی کیا، تین رکنی کمیشن جنیوا میں انسانی حقوق کونسل کے سامنے رپورٹ جون میں پیش کرے گا۔

مزید :

بین الاقوامی -