مودی کشمیر اور گجرات کے مسلمانوں کا قاتل، بابری مسجد گرانے کا ذمہ داز: فخرامام

مودی کشمیر اور گجرات کے مسلمانوں کا قاتل، بابری مسجد گرانے کا ذمہ داز: ...

  



اسلام آباد(آن لائن)چیئرمین کشمیر کمیٹی سید فخر امام نے کہا ہے کہ کشمیر تقسیم پاکستان کا نامکمل ایجنڈہ ہے جس کی تصدیق اقوام متحدہ کی قراردادیں کرتی ہیں، پانچ اگست کے بعد مسئلہ کشمیربین القوامی سطح پر تسلیم کیا گیا، بھارتی وزیراعظم نریندرا مودی گجرات کے مسلمانوں کا قاتل اور بابری مسجد کے گرائے جانے کا ذمہ دار ہے، چین نے مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ میں دوبارہ اجاگر کرنے کے لیے مثبت کردار ادا کیا اور اسی وجہ سے روس نے بھی مخالفت نہیں کی، نوجوان طلبا دنیا بھر میں ہونے والی تبدیلیوں اور خطے میں اس کے اثرات پر تحقیق کریں، ہمارا کام نوجوان طلباء کے لیے مواقع فراہم کرنا ہے انہیں جدید تحقیقی کام کرنے کے لیے محنت کرنا ہوگی۔ گزشتہ روزیہاں مقبوضہ کشمیر کے حوالے سے سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے سید فخرامام نے کہا کہ کشمیر کا دفاع پاکستان کادفاع ہے، کشمیر پر بھارت نے دراندازی کی تو اسے بھرپور جواب دیا جائے گا۔ پانچ اگست سے پہلے دنیا میں بھارت کا بیانیہ تسلیم کیا جاتا تھا کہ دہشت گردی کا مرکز پاکستان ہے لیکن بھارت کے کشمیریوں کے خلاف اقدامات کے بعد دنیا تسلیم کر رہی ہے کہ بھارت دنیا کے امن کے لیے خطرہ بن رہا ہے۔ انہوں نے کہا پاکستان کشمیر کے لیے ہر قسم کی قربانی دینے کے لیے تیار ہے اس موقع پر عندلیب عباس نے کہا کہ کشمیریوں کے لیے اگر کچھ کرنا ہے تو یہ اس کا بہترین موقع ہے، تحریک انصاف حکومت نے تحقیق کی بنیاد پر مسئلہ کشمیر دنیا کے سامنے پیش کیا پہلے کشمیر کو دوطرفہ مسئلہ سمجھا جاتا رہا لیکن اب اسے عالمی مسئلہ تسلیم کیا جارہا ہے۔مسئلہ کشمیر کے قانونی، انسانی، سیاسی اورمعاشرتی پہلوؤں پر بات کرنے کے لیے تعلیمی اداروں سے تحقیقی رپورٹس پر کام کی اجانا چاہیے۔

فخر امام

مزید : پشاورصفحہ آخر