محکمہ جنگلات کا لال سہانرا پارک حوالے سے تفصیلی جواب داخل

محکمہ جنگلات کا لال سہانرا پارک حوالے سے تفصیلی جواب داخل

  



لاہور(نامہ نگار)لاہور ہائیکورٹ میں لال سہانرا پارک کی ابتر صورتحال کے معاملے پر صوبائی حکومت کی جانب سے پارک میں درختوں کی کٹائی اور نایاب جانوروں سے متعلق جوتحریری جواب داخل کرایاگیاہے،اس میں محکمہ جنگلات کاموقف ہے کہ 1999ء سے لے کر 2019ء تک لال سہانرا پارک کے 4 ہزار 120 ایکٹر رقبے پر درخت لگائے گئے، پارک کا کل رقبہ 1 لاکھ 62 ہزار 568 ایکڑ ہے، 18 ہزار 628 ایکڑ رقبہ سیرابی جنگل ڈیکلیئر کیا گیا ہے، لال سہانرا پارک کا 1 لاکھ 43 ہزار 940 ایکڑ رقبہ صحرا پر مشتمل ہے، 1972 ء میں لال سہانرا پارک کو قومی پارک ڈکلیئر کیا گیا، ابتداء میں لال سہانرا پارک میں 531 کالے ہرن موجود تھے، بہاولپور لال سہانرا نیشنل پارک میں اب 419 کالے ہرن موجود ہیں، 21 برس کے دوران 1 ہزار 47 کالے ہرن مر ے، 531 کالے ہرنوں سے 1 ہزار 703 کالے ہرنوں کی افزائش کی گئی، 1999ء سے 2020 کے دوران پارک میں کالے ہرنوں کی تعداد 2 ہزار 234 تک پہنچی تھی، لال سہانرا پارک میں 12 کالے ہرنوں کی چوری کے واقعات رپورٹ ہوئے، محکمہ جنگلات نے 21 برس کے دوران 369 کالے ہرن فروخت کئے، 387 کالے ہرن لال سہانرا پارک سے دوسرے محکموں کو منتقل کئے گئے۔

لال سہانرا پارک

مزید : صفحہ آخر