ہائیکورٹ کا لاہور کی بڑی شاہراؤں سے 15روز میں تجاوزات ختم کرنے کا حکم

        ہائیکورٹ کا لاہور کی بڑی شاہراؤں سے 15روز میں تجاوزات ختم کرنے کا حکم

  



لاہور(نامہ نگار)لاہور ہائی کورٹ نے مال روڈ،جیل روڈ اور فیروز پور روڈ سے تجاوزات کے مکمل خاتمے کا حکم دے دیاہے۔مسٹر جسٹس شاہد کریم نیٹریفک کی روانی کو بہتر بنانے کی لئے کیس سماعت کے دوران چیف ٹریفک آفیسر لاہورسمیت متعلقہ محکموں کوحکم دیاہے کہ 15روز میں تجاوزات ختم کرکے ٹریفک تسلسل برقرار رکھا جائے،کیس کی سماعت شروع ہوئی توسی ٹی او لاہور کیپٹن (ر) لیاقت علی ملک واٹر کمیشن اورماحولیاتی کمیشن عدالت میں پیش ہوئے،سی ٹی او لاہور اپنی رپورٹ پیش کر تے ہوئے عدالت کوبتایا کہ وہ عوام کو ٹریفک قوانین پر پابندی کے لئے شعور اجاگر کررہے ہیں، جس پر فاضل جج نے کہا کہ یہ قوم اب شعور سے بہت آگے نکل آچکی ہے اس قوم کو شعور کی ضرورت نہیں،ٹریفک قوانین کی پابندی نہ کرنے والوں کے ساتھ شعور کے بجائے سختی سے نمٹا جائے،فاضل جج نے ٹریفک سے متعلق اقدامات کرنے پرسی ٹی او لاہور کی تعریف کی،سی ٹی اولاہور نے عدالت کو بتایا کہ سگنکلز پر بھکاریوں، گداگروں، چیل گوشت بیچنے والوں کو پکڑنے کا کام بھی ٹریفک وارڈنز کررہے ہیں،متعلقہ محکموں کو ان کے خلاف کارروائی کاحکم دیاجائے جس پر فاضل جج نے ٹریفک الائیڈ محکموں کو ان سے تعاون کی ہدایت جاری کی،عدالت نے 15روز میں عمل درآمد رپورٹ طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت ملتوی کردی،سی ٹی او لاہور کی جانب سے پیش کی جانے والی رپورٹ میں بتایا گیاہے کہ ہمارے پاس دھواں چیک کرنے کیلئے کوئی ڈ یوائس تک نہیں، محکمہ ماحولیات تعاون نہیں کرتا۔ ٹریفک کی بہتری کیلئے کمرشل لائزیشن پالیسی کو سخت کرنے کی ضرورت ہے۔ ہیڈ انجری کیسز میں 83 فیصد اور شرح اموات میں 41 فی صد کمی آئی ہے۔

سختی سے

مزید : صفحہ آخر