پناہ گاہوں کا دائرہ کا ر ملک بھر میں بڑھایا جائے: عمران خان

    پناہ گاہوں کا دائرہ کا ر ملک بھر میں بڑھایا جائے: عمران خان

  



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں) وزیراعظم عمران خان سے ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید،پارٹی رہنما جہانگیر خان ترین،گورنر سندھ عمران اسماعیل،چیئرمین سی پیک اتھارٹی عاصم سلیم باجوہ اور فوکل پرسن برائے پناہگاہ نسیم الرحمن نے الگ الگ ملاقاتیں کیں۔تفصیلات کے مطابق لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید سے ملاقات میں سکیورٹی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔جہانگیر خان ترین اور گورنر سندھ عمران اسماعیل سے ملاقاتوں میں ملکی مجموعی سیاسی صورتحال اور پارٹی امور پر گفتگو کی گئی۔چیئرمین سی پیک اتھارٹی عاصم سلیم باجوہ نے وزیر اعظم عمران خان کوسی پیک کے تحت منصوبوں پر پیشرفت سے آگاہ کیا۔فوکل پرسن برائے پناہ گاہ نسیم الرحمن سے ملاقات میں وزیر اعظم نے پناہ گاہوں کے دائرہ کار کو ملک بھر میں پھیلانے کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ آئندہ 12ماہ کیلئے پناہ گاہوں کے حوالے سے ایک جامع پروگرام کا آغاز ملک کے بڑے شہروں میں کیا جا رہا ہے،عالمی سطح پر بہترین طریقہ کار اور پائیدار ترقی کے اہداف کو سامنے رکھتے ہوئے پناہ گاہوں کو وسعت دی جائیگی۔ ملاقات میں وزیر اعظم کے وژن کے تحت ملک بھر میں قائم شدہ پناہ گاہوں کے نظم و نسق میں مزید بہتری اور آئندہ بارہ ماہ میں پناہ گاہوں کے دائرہ کار کی ملک بھر میں توسیع کے حوالے سے مجوزہ اقدامات پر گفتگو کی گئی۔وزیراعظم نے کہاکہ بے سہارا، غریب اور نادار لوگ ریاست کی ذمہ داری ہیں،نجی شعبے کی جانب سے پناہ گاہوں کی تعمیر میں بڑھ چڑھ کر حکومت کا ساتھ دینا ہمارے معاشرے کی مثبت اقدار اورانسانی ہمدردی کے جذبے کی عکاسی کرتا ہے۔بعدازاں عمران خان کینسر کے مرض میں مبتلااپنے معاون خصوصی نعیم الحق کی رہائشگاہ گئے اور صحت دریافت کی۔

عمران خان

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں) وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ انفارمیشن ٹیکنالوجی کا فروغ حکومت کی اولین ترجیح ہے،یہی ملک کا مستقبل ہے، پاکستان کے نوجوانوں میں آئی ٹی سیکٹر میں بے پناہ صلاحیت موجود ہے، حکومت آئی ٹی سیکٹر میں قابل نوجوانوں کی ہر ممکن طریقے سے سہولت کاری کیلئے پرعزم ہے، فری لانسرز کی سہولت کاری اور انکو مراعات فراہم کرنا ترجیحات میں شامل ہے، آئی ٹی سیکٹر کے فروغ سے شعبے سے وابستہ لاکھوں نوجوانوں کو اپنی صلاحیتیں برؤے کار لانے اور نوکریوں کے مواقع میسر آئیں گے۔، آئی ٹی سیکٹر کے فروغ کے حوالے سے اہم معاملات جیساکہ سپیشل ٹیکنالوجی زونز کے قیام، فائیو جی سپیکٹرم کے اجرا، ملک کے بڑے شہروں میں فائبرائیزیشن کے ذریعے ٹاورزکو ملانے و دیگر اہم معاملات کے حوالے سے ٹائم لائنز پر مبنی مفصل روڈ میپ آئندہ ایک ہفتے میں ترتیب دیا جائے۔ سیکریٹری آئی ٹی نے بتایا کہ آئی ٹی شعبے کے فروغ کیلئے ایک جامع ایکشن پلان ترتیب دیا جا چکا ہے اور تمام متعلقہ وزارتوں کو ذمہ داریاں تفویض کی جا چکی ہیں۔سٹیٹ بنک کے نمائندے نے بتایا کہ فری لانسرز کیلئے ترسیلات زر کی ماہانہ حد پچیس ہزار ڈالر تک بڑھانے کے حکومتی فیصلے پر عملدرآمد آئندہ دو دنوں میں مکمل کر لیا جائے گا۔ ترسیلات زر کی مد میں اس بات کو یقینی بنایا جا رہا ہے کہ فری لانسرز کو موصول شدہ رقوم پر زیادہ سے زیادہ مراعات دی جائیں اور بیرونی کرنسی کی ملکی کرنسی میں تبدیلی انٹر بنک ریٹ پر میسر آئے۔اجلاس میں بتایا گیا کہ ای پیمنٹ گیٹ وے کے قیام کا عمل اپریل تک مکمل کر لیا جائے گا۔ ایف بی آر کی نمائندہ نے وزیرِ اعظم کو آئی ٹی سیکٹر کے حوالے سے ٹیکس میں دی جا نے والی مراعات پر بریفنگ دی۔

وزیراعظم

مزید : صفحہ اول