سعودی شہزادے کو پاکستان سے 50 شاہین برآمد کرنے کی اجازت

سعودی شہزادے کو پاکستان سے 50 شاہین برآمد کرنے کی اجازت

  



کراچی(آن لائن) وفاقی حکومت نے سعودی عرب کے شہزادے فہد بن سلطان بن عبدالعزیز السعود کو20-2019 کے دوران 50 شاہین برآمد کرنے کی اجازت دے دی۔ذرائع کے مطابق شاہین کی انتہائی معدوم اقسام سکیر اور پریگرین کو ملک میں موسم سرما کے دوران عالمی سطح پر تحفظ دیے گئے پرندے تلور کا شکار کرنے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے اور سعودی عرب کے شکاری تلور کے شکار کے لیے بڑی تعداد میں شاہین اپنے پاس رکھتے ہیں۔تاہم وقت کے ساتھ شاہین بوڑھے ہوجاتے ہیں اور شکاریوں کو انہیں کم عمر شاہیوں سے بدلنا پڑتا ہے تا کہ تلور کا بہتر طریقے سے شکار کیا جائے۔لہٰذا سعودی عرب کی درخواست پر حکومت پاکستان کی جانب سے اجازت پرمٹ جاری کردیا گیا۔ سعودی سفارتخانے کے ذریعے برآمدی اجازت نامے کی درخواست کی تھی۔جس پر وزارت خارجہ کے ڈپٹی چیف آف پروٹوکول محمد عدیل پرویز نے اجازت نامہ جاری کیا اور اسے اسلام آباد میں سعودی سفارتخانے پہنچادیا گیا۔ سفارتخانہ سعودی عرب کے صوبے تبوک کے گورنر شہزادہ فہد بن سلطان کے ذاتی استعمال کے لیے 5 شاہین پاکستان سے سعودی عرب برآمد کرسکتے ہیں۔خط میں لکھا گیا کہ متعلقہ حکام سے درخواست کی جاتی ہے کہ 50 شاہینوں کی سعودی عرب برآمد میں سہولت فراہم کریں۔

شاہین برآمد کی اجازت

مزید : صفحہ اول