دائرہ دین پناہ‘ سیوریج منصوبہ کرپشن‘ کمیشن کی نذر‘ لوگوں کا احتجاج

  دائرہ دین پناہ‘ سیوریج منصوبہ کرپشن‘ کمیشن کی نذر‘ لوگوں کا احتجاج

  



دائرہ دین پناہ (نامہ نگار) دائرہ دین پناہ شہرکیلئے اپریل 2012میں 2کروڑ34 لاکھ کی لاگت سے تعمیرہونے والا سیوریج سسٹم محکمہ پبلک ہیلتھ اور ان کے چہیتے(بقیہ نمبر41صفحہ12پر)

ٹھیکہ دار ملک اللہ داد کھر کی کرپشن کے باعث مکمل طورپر فلاپ ہوگیا محکمہ پبلک ہیلتھ نے سیوریج کا منصوبے کا ٹھیکہ کاشف کنٹریکشن کے ٹھیکہ دار ملک اللہ داد کھر کو بھا دے دیا جس نے مذکورہ منصوبہ میں نہ صرف ناقص میٹریل کا استعمال کیا بلکہ منصوبہ میں پائپوں کی ڈی وائرنگ کرکے پانی کی سطح کو کم کرتے ہوئے کھال کے نیچے پختہ اینٹوں سے سولنگ لگا کر کھال تعمیر کرنا ضروری تھا جبکہ اطراف میں کریڈل بجری،سیمنٹ اور ریت سے ملحقہ 8فٹ پائپ پر 5 عدد سیمنٹ کی بوری کے استعمال کے بجائے صرف ایک بوری استعمال کی گئی۔پائپوں کے جوڑ کو ملانے کیلئے درمیان میں ربڑرنگ کے بعد لوہے کا جنگلہ اور بعد ازاں کم ازکم 5بوری سیمنٹ سے ایک مضبوط بلاک تعمیر کرنا تھا جوکہ نہ کیا گیا ناقص میٹریل کے باعث سکریننگ چیمبر لیگ ہوگئے 2موٹروں کی بجائے ایک موٹر لگادی گئی مین ہول پر لگائے گئے لوہے کے کڑے کا وزن 25کلو ہے جبکہ منصوبہ میں 37کلوظاہر کیاگیا۔مین ہول کا ڈھکنا پر دیگچی لوہا 35کلو درکار تھا جبکہ ناقص ترین لوہا 13 کلولگایا گیا مین ہول میں دراڑوں کے علاوہ پانی کھینچنے والے کھال میں بھی دراڑیں پڑچکی ہیں مرکزی ہول کی جالیاں پھٹ گئی ہیں لائنیں بند ہیں جس کے باعث شہر بھرکی گلیاں محلے گندے پانی سے بھر چکے ہیں نکاسی آب نہ ہونے سے شہرکے درمیان سے گزرنے والا گندہ نالہ بھی اورفلوہوکراس کا پانی گھر وں میں داخل ہوجاتاہے موسم برسات میں بدبواورتعفن کا راج ہوتا ہے کنواں اور کمرے دی دیواروں میں دراڑیں کسی بھی بڑے حادثہ کا پیش خیمہ ثابت ہوسکتی ہیں.7سال کا طویل عرصہ گزرجانے کے باوجود شہریوں کی طرف سے اعلیٰ حکام کو دی جانے والی درخواستین بھی بے سود ثابت ہوچکی ہیں شہریوں محمدافضل،محمد بلال،محمدعمران،فیصل مجید،حسین ہاشمی،عدیل احمد،شکیل احمد،منظورحسین،ارشادحسین،محمدبلال،غلام شبیر،زاہد حسین نے کمشنرڈیرہ غازیخان،ڈی سی مظفرگڑھ،کے علاوہ دیگر اعلیٰ حکام سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے

نذر

مزید : ملتان صفحہ آخر