جمشیددستی کا 4روزہ ریمانڈ نامعلوم مقام پر تفتیش شروع مقدمے کے مدعی سے ڈیل کی افواہیں

      جمشیددستی کا 4روزہ ریمانڈ نامعلوم مقام پر تفتیش شروع مقدمے کے مدعی سے ...

  



ملتان، مظفر گڑھ ‘ چوک مہر پور، ٹبہ سلطان پور (کوٹ رپورٹر، نامہ نگار‘ نمائندہ پاکستان)آئل ٹینکرزکو لوٹنے اور (بقیہ نمبر16صفحہ12پر)

عملے کو اغوا کرنے کے کیسز میں گرفتار ہونے والے سابق ممبر قومی اسمبلی جمشید دستی کو علاقہ مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش کر دیا گیا،پولیس کی جانب سے جسمانی ریمانڈ کی درخواست پر عدالت نے جمشیددستی کو 4 روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا.تفصیلات کیمطابق تھانہ سٹی اور تھانہ قریشی میں درج آئل ٹینکر لوٹنے اور عملے کو اغواء کرنے کے 2 مقدمات میں نامزد عوامی راج پارٹی کے سربراہ اور سابق ممبر قومی اسمبلی جمشید دستی کو مظفر گڑھ پولیس نے جمعرات کے روز ملتان کینٹ سے گرفتار کیا تھا.جمشید دستی کو گزشتہ مقامی مجسٹریٹ جاوید اقبال کی عدالت میں پیش کیا گیا،اس موقع پر کچہری میں سکیورٹی کے انتہائی سخت ترین انتظامات کیے گئے تھے،ڈی ایس پی سٹی عظمت اللہ،ڈی ایس پی انوسٹی گیشن،ایس ایچ او سٹی سمیت پولیس کی بھاری نفری کچہری میں موجود رہی،غیرمتعلقہ لوگوں کو احاطہ عدالت سے باہر نکال دیا گیا،جمشید دستی کے عدالت میں داخلے کے موقع پر پولیس اہلکاروں،جمشید دستی کے وکلاء اور عوامی راج پارٹی کے کارکنوں میں تلخ کلامی اور دھکم پیل بھی ہوئی،سماعت کے موقع پر عوامی راج پارٹی کے سربراہ جمشید دستی کے وکلاء وائس چیئرمین پنجاب بار کونسل جام محمد یونس،شاکر سکھانی ایڈوکیٹ،باسر سکھانی ایڈوکیٹ ودیگر نے عدالت سے جمشید دستی کا میڈیکل کرانے اور گھر کا کھانا فراہم کرنے کی اجازت دینے کا مطالبہ کیا.جمشیددستی کے وکلاء کا کہنا تھا کہ جمشید دستی کی گرفتاری سیاسی انتقام ہے کیونکہ جمشیددستی نے کچھ عرصہ قبل مولانا فضل الرحمان کے آزادی مارچ میں شرکت کی،جمشید دستی کے وکلاء نے یہ الزام بھی عائد کیا کہ سیاسی انتقام کے تحت عوامی راج ویلفیئر آرگنائزیشن کی طلباء وطالبات کو مفت سفری سہولیات فراہم کرنے والی بسوں کو بھی پولیس نے پکڑلیا،اب بھی پولیس جمشید دستی اور انکے ساتھیوں کو ہراساں کررہی ہے،جمشید دستی کے وکلاء کا کہنا تھا کہ مہنگائی،بیروزگاری اور سرائیکی صوبے کے لیے آواز اٹھانے پر جمشید دستی کو گرفتار کیاگیا ہے،انھوں نے عدالت سے اپیل کی کہ جمشید دستی کیخلاف کیسز کو خارج کیا جائے.عدالت نے جمشید دستی سے استفسار کیا کہ کیا وہ کچھ کہنا چاہتے ہیں جس پر جمشید دستی کا کہنا تھا کہ وہ بے قصور ہیں انھیں سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا جارہا ہے،دوسری جانب سماعت کے دوران سرکاری وکلاء نے استدعا کی کہ آئل ٹینکرز سے لوٹا جانے والا لاکھوں روپے مالیت کا تیل اور واردات میں استعمال ہونے والا اسلحہ جمشید دستی سے برآمد کرنا ہے اس لیے پولیس کو ملزم کا 14 روزہ جسمانی ریمانڈ دیا جائے.سماعت کے ختم ہونے کے بعد جمشید دستی کو دوبارہ نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا،اس موقع پر جمشید دستی کا کہنا تھا کہ اللہ تعالیٰ حکمرانوں کو ہدایت دے.جو یہ کررہے ہیں حالات سامنے ہیں.سماعت کے بعد عدالت نے جمشید دستی کے جسمانی ریمانڈ کی درخواست پر جمشید دستی کو 4 روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا.جبکہ جمشید دستی کے وکلاء کی جانب سے جمشیددستی کا میڈیکل کرانے اور انھیں گھر کا کھانا فراہم کرنے کی درخواست بھی منظور کرلی گئی.اس موقع پر عوامی راج پارٹی کے مرکزی رہنما چوہدری عامر کرامت،جمشیددستی کے بھائی جاوید دستی اور دیگر کارکن بھی موجود تھے.جمشید دستی کے بھائی جاوید دستی کا عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ جمشید دستی کوئی دہشتگرد نہیں ہے،اس پر جھوٹے مقدمات قائم کئے گئے ہیں.جمشید دستی مزدور اورغریبوں کا ہمدرد ہے،پولیس نہ تو ملاقات کرنے دے رہی ہے اور نہ ہی اسے گھر کا ناشتہ فراہم کرنے دیا گیا ہے۔ عدالت میں پیش ہوتے ہوئے جمشید دستی نے نئے کپڑے پہنے ہوئے تھے اور وہ مسکراتے رہے،زرائع کے مطابق آئیل ٹینکر سے ڈیزل چوری اور اغواء کے مقدمے میں گرفتار سابق رکن اسمبلی جمشید دستی کی مقدمے کے مدعی سے راضی نامے کی افواہیں بھی باز گشت کرتی رہیں۔ دریں اثنا عوامی را ج پارٹی کے سربراہ سابق رکن قومی اسمبلی جمشید احمدخان دستی کی گرفتار ی کے خلاف ضلعی صدر وہاڑی عوامی راج پارٹی صفدر عباس خان منیس کی قیادت میں ٹبہ سلطان پورکے کارکنوں کا احتجاج کیا احتجاج کرتے ہوئے صفدر عباس خان منیس نے کہاکہ جمشید احمد خان دستی کو مظلوموں کی آواز بلند کرنے، غریبوں کی مدد کرنے اور وڈیر وں،جاگیرداروں کے خلاف آواز بلند کر نے کی سزادی جارہی ہے انہوں نے کہا کہ سابق رکن قومی اسمبلی جمشید احمد خان دستی نے ہمیشہ شرافت اور اصولوں کی سیاست کی ہے کسی وڈیرے یا سیاسی جاگیردار کے آگے جھکنے کی بجائے عوام کی فلاح وبہود کو سامنے رکھتے ہوئے ہمیشہ غریب اور ظلوم دشمن قوتوں کے خلاف لڑتے چلے آرہے ہیں عوامی راج پارٹی کے کارکن اپنے قائد کی گرفتاری کی شدید مذمت کرتے ہیں صفدر عباس خان منیس نے کہا کہ ہماری پارٹی عوامی راج کے قائد جمشید احمد خان دستی نے نہ ہی کوئی آئل ٹینکر لوٹے ہیں اور نہ ہی ڈاکوؤں کی سرپرستی کی ہے یہ صر ف اور صرف سیاسی انتقام لیا جارہا ہے جس کی کارکن بھر پور مذمت کرتے ہیں

ریمانڈ

مزید : ملتان صفحہ آخر