گرلز سکولوں کی چیکنگ مرداے ای اوز کے حوالے‘ خواتین اساتذہ کا احتجاج

گرلز سکولوں کی چیکنگ مرداے ای اوز کے حوالے‘ خواتین اساتذہ کا احتجاج

  



راجن پور (ڈسٹر کٹ رپورٹر) راجن پور کے گرلز سکولوں کی چیکنگ پر مرد اے ای اوز کی تعیناتی پر خواتین اساتذہ پریشا نی کاشکار ہوگئیں،مرد آفیسران کئی کئی گھنٹے گرلز سکولوں میں بیٹھے رہتے ہیں اور فون پر دوستوں سے گپیں ہا نکتے رہتے ہیں تفصیلات کے مطابق (بقیہ نمبر7صفحہ12پر)

خواتین سکولوں میں مرد اے ای اوز کی تعیناتی پر خواتین اساتذہ شدید پریشا نی سے دوچار ہیں کہیں مرد اے ای اوز اپنارعب جھاڑتے ہیں کہیں نان سیلری بجٹ، آڈٹ کے نام پر خواتین اساتذ ہ پردباؤ ڈال کر اُن سے جبری طور پرہزاروں روپے وصول کرتے ہیں ایسا ہی ایک واقعہ گذشتہ دنوں گورنمنٹ گرلز پرائمری سکول بستی سرائی میں پیش آیا جہاں تعینات مرکز کوٹلہ مالیم کے مرد اے ای او نذیر احمد نے خواتین اساتذہ کی تذلیل کرتے ہوئے اُنہیں ریٹائرمنٹ لینے کی ہدایات جاری کردیں،اسی مرداے ای اوپر سرکاری فنڈز، آڈٹ کے نام پر جبری وصولی کاالزام بھی لگ چکا ہے خواتین اساتذہ نے صوبائی وزیرتعلیم پنجاب سے ضلع راجن پور کے گرلز سکولوں میں تعینات مرد اے ای اوز کوتبدیل کرکے خواتین اے ای اوز تعینات کرنے کا مطا لبہ کیا ہے۔

احتجاج

مزید : ملتان صفحہ آخر