کالعدم ٹی ٹی پی رہنما احسان اللہ احسان کا سرکاری تحویل سے فرار کا دعوی

کالعدم ٹی ٹی پی رہنما احسان اللہ احسان کا سرکاری تحویل سے فرار کا دعوی

  



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)کالعدم تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) کے سابق ترجمان احسان اللہ احسان نے دعویٰ کیا ہے کہ وہ سرکاری تحویل سے فرار ہوگئے ہیں۔کالعدم ٹی ٹی پی کے سابق ترجمان احسان اللہ احسان کی جانب سے سرکاری تحویل سے فرار ہونے سے متعلق سوشل میڈیا پر دیے گئے آڈیو پیغام کے معاملے پر حکومتی ذرائع نے واضح کیا ہے کہ احسان اللہ احسان نے ایک معاہدے کے تحت خود کو رضا کارانہ طور پر سرنڈر کیا تھا۔سوشل میڈیا پر جاری ایک آڈیو پیغام میں کالعدم تحریک طالبان کے سابق ترجمان احسان اللہ احسان نے دعویٰ کیا کہ اب وہ سرکاری تحویل میں نہیں۔حکومتی ذرائع نے اس معاملے پر واضح کیا کہ احسان اللہ احسان نے 5 فروری 2017 کورضاکارانہ طور پر سرنڈر کیا تھا، سرنڈر کرنے کے بعد ان سے متعلق کوئی معلوماتی بیان سامنے نہیں آیا تھا۔ سرنڈر کے بعد ایک ٹی وی انٹرویو میں انہوں نے کئی اعتراف بھی کئے تھے۔احسان اللہ احسان سرنڈر کرنے سے قبل پاکستان میں بڑے پیمانے پر دہشت گردی کی کارروائیاں کرنے کے دعوے کر چکے ہیں۔سکیورٹی ذرائع کے مطابق احسان اللہ احسان کے انکشافات کی روشنی میں دہشت گردوں کے خلاف کئی کامیاب آپریشن کیے گئے تھے۔

احسان اللہ احسان

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر