پاکستانی طالبان کے 2 سینئر رہنما کابل میں قتل، کنڑ میں سپرد خاک کردیا گیا

پاکستانی طالبان کے 2 سینئر رہنما کابل میں قتل، کنڑ میں سپرد خاک کردیا گیا
پاکستانی طالبان کے 2 سینئر رہنما کابل میں قتل، کنڑ میں سپرد خاک کردیا گیا

  



کابل(پی پی آئی) کابل کے مرکزی علاقے میں پاکستانی طالبان کے سابق نائب سربراہ شیخ خالد حقانی اور اہم کمانڈر قاری سیف یونس کے قتل کی خبر نے چونکا دیا ہے، دونوں کابل میں ایک خفیہ ملاقات کیلئے موجود تھے تاہم وہ کس سے ملنے والے تھے یہ واضح نہیں ہوسکا، دونوں کو کنڑ میں سپرد خاک کردیا گیا۔

ذرائع کے مطابق ان دونوں کے پاس موجود شناختی کاغذات جعلی تھے۔وہ کابل میں کیا کر رہے تھے اور انہیں کس نے قتل کیا،اس کے تانے بانے اس خطے میں سکیورٹی فورسز اور شدت پسند گروہوں کے باہمی تعلق سے جڑے ہوئے ہیں۔ شدت پسند گروپوں کے ذرائع کے مطابق یہ دونوں افراد پاکستانی طالبان کے سینئر رہنما تھے۔مارے جانے والے ایک شخص کا نام شیخ خالد حقانی ہے۔

شیخ خالد حقانی پر پاکستان میں اہم سیاستدانوں پر ہونے والے حملوں اور 2014 میں پشاور میں آرمی پبلک سکول پر ہونے والے اس حملے میں ملوث ہونے کا الزام عائد کیا جاتا ہے جس میں 150 سے زیادہ افراد مارے گئے تھے جن میں سے بیشتر نوعمر بچے تھے۔

مزید : بین الاقوامی