دنیا میں انسانیت ہر بات پر مقدم،انسانوں پر انسانوں کے حقوق انسان ہی معاف کرسکتا ہے:سردار تنویر الیاس

دنیا میں انسانیت ہر بات پر مقدم،انسانوں پر انسانوں کے حقوق انسان ہی معاف ...
دنیا میں انسانیت ہر بات پر مقدم،انسانوں پر انسانوں کے حقوق انسان ہی معاف کرسکتا ہے:سردار تنویر الیاس

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) پنجاب سرمایہ کاری بورڈ کے چیئرمین سردار تنویر الیاس خان نے کہا کہ اس دنیا میں انسانیت ہر بات پر مقدم ہے،انسانوں پر انسانوں کے حقوق کو انسان ہی معاف کرسکتا ہے،اسے معاف کرنا اللہ تعالیٰ نے اپنے پاس بھی نہیں رکھا،عبادات انسان پر ذاتی طور پر فرض ہیں مگر انسان پر انسانیت کا حق ہے،انسانیت کی خدمت کا درس تمام مذاہب دیتے ہیں اور اس پر یقین رکھتے ہیں،برصغیر میں قیام پاکستان سے پہلے انگریز کے دور میں انسانی خدمت کے جتنے بھی بڑے ادارے نظر آتے ہیں وہ سب غیر مسلموں کے نام سے منسوب ہیں، اس لئے کہ انھوں نے یہ ادارے سرکاری خرچ پر نہیں اپنے ذاتی خرچ پر قائم کئے،انھیں چلایا اور انسانیت کی خدمت کی،آج بھی یہ ادارے ہزاروں لوگوں کی فلاح و بہبودکا مرکز ہیں،سر گنگا رام ہسپتال اورہولی فیملی ہسپتال سے آج بھی لاکھوں لوگ مستفید ہورہے ہیں۔

پاکستان اکانومی واچ کے زیر اہتمام سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے  معروف کاروباری شخصیت اور پنجاب سرمایہ کاری بورڈ کے چیئرمین سردار تنویر الیاس خان نے کہا کہ اسی طرح رفائے عامہ کے دیگر بڑے رفاہی اور تعلیمی ادارے بھی غیر مسلموں نے اپنی ذاتی حیثیت اور انجمنوں کے ذریعے بنوائے جس سے لاکھوں لوگ فیض یاب ہورہے ہیں۔انھوں نے کہا کہ بزرگان دین سے یہ سنا ہے کہ اگر مرنے کے بعد انسان کو پوچھا جائے کہ تمہیں زندہ کرکے دنیا میں واپس بھیج دیا جائے تو کیا کرو گے؟تو وہ ایک ہی جواب دے گا کہ میں صرف اور صرف انسانیت کی خدمت کروں گا کیونکہ نماز، روزہ، حج،زکوٰۃ تو اس پر ذاتی طور پر فرض ہیں جو اس کے اپنے کرنے کا کام ہے وہ صرف اور صرف انسانیت کی خدمت ہے،عزیز و اقارب کی خدمت ہے،دوستوں اور رشتہ داروں کی خدمت ہے۔حضورﷺ نے بھی انسانیت کو مقدم رکھتے ہوئے کہا کہ کالے کو گورے پر،اور گورے کو کالے پر،عربی کو عجمی پر اور عجمی کو عربی پر کوئی فضیلت حاصل نہیں ماسوائے تقویٰ کے اور تقویٰ میں پہلی شرط انسانیت کی فلاح ہے، اسی طرح آپ ﷺ نے فرمایا کہ ایک انسان کا قتل ساری انسانیت کا قتل ہے۔

انھوں نے کہا کہ معاشی طور پر معاشرے کو بہتر بنیادوں پر استوار کرنا اور اس کے لئے وقت دینا انسانیت کی بڑی خدمت ہے،اگر معیشت بہتر ہوگی تو اس سے انسانوں کا بھلا ہوگا ،انسانی معاشرے میں بہتری آئے گی،خوشحالی ہوگی تو انسان بہتر زندگی گزار سکیں گے۔انھوں نے کہا کہ حکومت پاکستان اور حکومت پنجاب انسانیت کی فلاح کے لئے ہر حد تک جانے کو تیار ہے تاکہ لوگوں کا معیار زندگی بہتر ہوسکے۔انھوں نے کہا کہ مسلمانوں کو غربت کو دور کرنے اور معیشت کو بہتر کرنے کے لئے اپنی توانائیاں وقف کر دینی چاہئیں۔ تقریب سے سابق سیکرٹری دفاع لیفٹننٹ جنرل (ر) نعیم خان لودھی،میجر جنرل (ر) آصف دریز،میجر جنرل (ر) اسلم طاہر،بریگیڈیئر (ر) آصف ہارون،بریگیڈیئر (ر) اسلم خان اور ڈاکٹر مرتضیٰ مغل نے بھی خطاب کیا۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد